Hamada,leading,Palestinian,social activist,Jerusalem,solitary confinement,Israeli prison
28 دسمبر 2020 (12:06) 2020-12-28

مقبوضہ بیت المقدس: مقبوضہ بیت المقدس سے تعلق رکھنے والی ایک سرکردہ فلسطینی سماجی کارکن حمادہ 48 دن سے اسرائیلی جیل کی کال کوٹھڑی میں تنہائی میں پابند سلاسل ہیں۔

تفصیلات کے مطابق ڈیڑھ ماہ قبل حمادہ کو اسرائیل کی ایک جیل میں قید تنہائی میں ڈال دیا گیا تھا۔ اس کے بعد اس کے بارے میں کسی قسم کی معلومات نہیں مل سکی ہیں۔اسیرہ کے اہل خانہ نے کہا کہ وہ حمادہ کے حوالے سے بہت زیادہ پریشان ہیں۔ اسیرہ کے بچوں، شوہر ، والدین اور یگر اقارب کی رابطہ کرنے کی کوششوں کے باوجود قابض حکام کی طرف سے کچھ نہیں بتایا گیا۔

حمادہ کے اہل خانہ نے کہا کہ حمادہ کو گذشتہ نومبر میں الجلمہ جیل میں قید تنہائی میں ڈال دیا تھا،یہ اس کی پہلی قید تنہائی نہیں بلکہ وہ پہلے بھی دو ماہ تک قید تنہائی میں سزا کاٹ چکی ہیں۔ 34 سالہ حمادہ جنوبی بیت المقدس کے علاقے الصور سے تعلق رکھتی ہیں، انہیں اسرائیلی فوج نے 12 اگست 2017 کو حراست میں لیا تھا۔


ای پیپر