ویکسین کا انسانوں پر کامیا ب تجربہ ہوگیا
28 اپریل 2020 (22:29) 2020-04-28

سڈنی:آسٹریلیا کے ایک ریسرچ کلینک نے کہا ہے کہ وہ کلوور بائیوفارماسوٹیکلز نامی چین میں واقع عالمی بائیوٹیکنالوجی کمپنی کی تیار کردہ کوویڈ19-ویکسین کی آزمائش کے لئے رضاکاربھرتی کرے گا۔

مغربی آسٹریلیا کے شہر پرتھ میں واقع لائنر کلینیکل ریسرچ نے منگل کو کہا ہے کہ وہ آئندہ دو ماہ کے اندر صحتمند بالغ افراد کو اس ویکسین کے ٹرائل کے لئے بھرتی کرے گا۔چیف ایگزیکٹو جیڈن راجرز نے کہا کہ آزمائشی مرحلے میں موجود ایس-ٹرامر ویکسین نے بڑی صلاحیت کا مظاہرہ کیا ہے اور وہ کوویڈ19-کے خلاف عالمی جنگ میں سب سے آگے ہے۔راجرز نے کہا کہ یہ عالمی سطح پرویکسین کی سب سے نمایاں آزمائش ہے جس میں ویکسین کی مشہور کمپنیوں میں سے کچھ شریک ہیں۔وسیع پیمانے پر نمایاں تحقیق اور تجارتی پیمانے پر پیداواری صلاحیتوں کے ساتھ کوویڈ19-ایس-ٹرامر کروناوائرس کی وبا کے لئے عالمی سطح پر ویکسین کے سب سے پرجوش پروگراموں میں سے ایک ہے۔

کلوور کی ایس-ٹریمر ویکسین تیاری کے مرحلے میں شامل پہلی کوویڈ19-ویکسینز میں شامل ہے۔ اس کا مقصد مہلک کروناوائرس سے لڑنے کے لئے جسم کو اینٹی باڈیز تیار کرنے میں مدد فراہم کرنا ہے جو کوویڈ 19-بیماری کا سبب ہے۔کلینیکل ٹرائل کے پہلے مرحلے میں آسٹریلیا سے صحتمند بالغ اور بزرگ افراد شامل ہوں گے، آسٹریلیا کے اس مرحلے میں جزوی مطالعہ کے لئے اس وباکی نسبتا کم شرح کی وجہ سے انتخاب کیا گیا ہے۔راجرز نے وضاحت کرتے ہوئے کہاکہ ہم خوش قسمتی سے دنیا کے ان چند ممالک میں سے ہیں جو اب بھی عملی طور پر کلینیکل آزمائش کی سہولیات کی پیش کش کر رہے ہیں کیونکہ ہمارے ملک میں دنیا کے دیگر حصوں کے مقابلے میں کوویڈ19-کے کیس کم تعداد میں ہیں۔

آسٹریلیا میں ٹیسٹ کامیاب ہوجانے کی صورت میں آزمائش میں توسیع کی جائے گی تاکہ دنیا بھر سے ہزاروں افراد شامل ہوں گے۔کلوور بائیوفارماسوٹیکلز کے چیف اسٹراٹیجی آفیسر اور کوویڈ19- ایس-ٹرامر ویکسین کے مشترک موجد جوشوا لیانگ نے کہا کہ کوویڈ19-کے اثرات کو دیکھتے ہوئے ، ایک کامیاب کلینیکل آزمائش دنیا کے لئے انتہائی اہمیت کی حامل ہے۔لیانگ نے کہا کہ "ہم محنت سے کام کر رہے ہیں اور امید ہے کہ اس وبا کے خلاف جنگ میں عالمی کوششوں میں نمایاں کردار ادا کریں گے جس سے ہم سب متاثر ہوئے ہیں۔

انقرہ: ترکی کا ایک فوجی مال بردار طیارہ نوول کروناوائرس کے طبی سامان کی فراہمی کے لئے امریکہ روانہ ہو گیا ہے ، یہ بات ترک وزارت دفاع نے منگل کے روز بتائی۔وزارت نے ٹوئٹر پر کہا کہ ترک مسلح افواج کے طیارے کے ذریعے امریکہ کو فراہم کیے جانیوالے طبی امدادی سامان کو لادنے کا عمل مکمل ہو گیا ہے۔نوول کروناوائرس کا مقابلہ کرنے کے لئے استعمال کئے جانیوالے طبی امدادی سامان کو لے جانیوالا ہمارا طیارہ اتیمسگوت ایئر فیلڈ انقرہ سے روانہ ہو گیا ہے۔وزارت نے کہا کہ امدادی سامان میں مجموعی طور پر ماسک ، فیس شیلڈز ، این 95 ماسک شامل ہیں۔ترک صدر رجب طیب ایردوان نے پیر کے روز کہا تھا کہ ایسے وقت جب یہاں تک کے ترقی یافتہ ممالک بھی ترکی سے مدد مانگ رہے ہیں ہم نے بلقان سے افریقہ تک وسیع جغرافیہ کیلئے اپنی مدد کی پیش کش کی ہے۔انہوں نے کہا تھا کہ ہم منگل کو امریکہ کیلئے طبی امداد بھیج رہے ہیں ، جس میں سرجیکل ماسک ، این 95 ماسک ، حفاظتی سوٹ اور جراثیم کش شامل ہیں۔


ای پیپر