اسرائیلی جاسوس مخبری کرنے پر پکڑا گیا 
27 اکتوبر 2018 (12:16) 2018-10-27


غزہ :فلسطین کے علاقے غزہ میں صہیونی ریاست کے لیے مخبری کرنے والے ایک خطرناک جاسوس کو حراست میں لیا گیا ۔

تفصیلات کے مطابق فلسطین کے علاقے غزہ میں اسرائیل کیلئے مخبری کرنیوالا ایک خطرناک 45 سالہ جاسوس کو ا حراست میں لیا گیا۔ اسرائیلی جاسوس کی گرفتاری غزہ کی پٹی میں صہیونی انٹیلی جنس ادارے’’شاباک‘‘ کی کارروائیوں پر کاری ضرب ہے۔ جاسوس کو غزہ کی پٹی میں اہم شخصیات، تنظیموں کی لیڈرشپ بالخصوص موثر شخصیات کی جاسوسی اور ان کی نقل وحرکت پرمتعین کیا گیا تھا۔تفتیش کے دوران جاسوس نے اعتراف کیا ہے کہ وہ 15 سال سے اسرائیل کے لیے مخبری کرتارہا ہے۔ اس نے دشمن کے لیے جاسوسی کی کئی بڑی مہمات میں دشمن کو معلومات فراہم کیں۔ جاسوس نے فلسطینی مزاحمتی ر ہنماؤں کے گھروں کی تصاویر اتار کر دشمن کو بھیجیں اور غزہ میں عسکری رہنماؤں کی ریکی اور ان کی گاڑیوں کی تک کی تصاویر بھیجی گئیں۔حساس معلومات اور جاسوسی میں معاونت پر اسرائیل کی طرف سے جاسوس کو بھاری رقوم اور مواصلاتی آلات بھی فراہم کیے گئے۔

اس کے بدلے میں اس نے دشمن کو فلسطینی مزاحمتی قوتوں کی دفاعی صلاحیت، راکٹ فائر کرنے کے مقامات، راکٹ کے گوداموں، سرنگوں اور زمین دوز بنکروں کے بارے میں معلومات دیں۔ اسرائیل ان معلومات کی روشنی میں غزہ کی پٹی پر بمباری کرتا رہا ہے۔ جاسوس کی گرفتاری کے فلسطینی حکام نے ایک پیچیدہ طریقہ اختیار کیا اور مختلف مقامات پر جاسوسی آلات کی مدد سے نشاندہی کے بعد گرفتار کیا گیا۔


ای پیپر