The inside story of the meeting of government spokespersons
کیپشن:   بھٹو خاندان میں طویل عرصے بعد خوشی کا دن ، سورس:   ٹوئٹر
27 نومبر 2020 (19:36) 2020-11-27

اسلام آباد :وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت پارٹی اور حکومتی ترجمانوں کا اہم اجلاس ہو ا،اجلاس میں ملکی سیاسی، معاشی، کورونا کی صورتحال پر گفتگو ہوئی ،اجلاس میں اپوزیشن کے جلسو ں کے حوالے سے بات چیت کرتے ہوئے شرکا کا کہنا تھا کہ پی ڈی ایم کو موجودہ حالات میں جلسے بند کردینے چاہیں ، انہیں صرف اپنا خیال ہے،لوگوں کی فکر نہیں، جتنے مرضی جلسے کرلیں این آر او نہیں ملے گا۔

تفصیلات کے مطابق حکومتی ترجمانوں کے اجلاس سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر اعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ عالمی وبا کی دوسری لہر انتہائی خطرناک نظر آ رہی ہے ،اجلاس میں اس بات کی طرف اشارہ کیا گیا کہ عالمی وبا کی دوسری لہر پہلی سے زیادہ خطرناک ہو سکتی ہے ،اس موقع پر وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ عالمی وبا کے پھیلائو سے بچنے کیلئے ہر کسی کو کردار ادا کرنا ہوگا ۔

وزیر اعظم نے کہا اپوزیشن پہلے تو پورا ملک لاک ڈائون کرنے کی بات کرتی تھی ،اب اپوزیشن وبا ئی صورتحال میں جلسے کر کے لوگوں کی زندگیاں خطرے میں ڈال رہی ہیں ،عالمی وبا سے بچنے اور بچانے کیلئے ہر کسی کو اپنا کردار ادا کرنا ہوگا ،اجلاس میں حیران کن طور پر بعض پارٹی ترجمانو ں نے  جلسوں کے حق میں ،بعض نے مخالفت کر دی،شفقت محمود نے اپوزیشن کےجلسوں کےمعاملے پر ترجمانوں کر بریف بھی کیا ۔

شیخ رشید نے ترجمانوں کے اجلاس میں اپوزیشن کے جلسوں پر تنقید کرتے ہوئے کہا لوگوں کو عالمی وبا سے بچانے کا وقت ہے ،جلسوں اور جلوسوں  کا نہیں ،پارٹی ترجمانوں میں سے کئی ایک نے جلسوں سے باز نہ آنے والوں کی پکڑ دھکڑ کا بھی مشورہ دیا ۔

اجلا س میں واضح کیا گیا کہ عالمی وبا  خطرناک حد تک پھیل رہا ہے احتیاط ضروری ہے، ایس او پیز پر ہر صورت عملدرآمد کروایا جائے، اجلاس میں بتایا گیا کہ حکومتی اقدامات سے مہنگائی میں کمی ہوئی ہے، مہنگائی میں مزید کمی کے لیے اقدامات کررہے ہیں۔ 


ای پیپر