PPP, PM Imran Khan, Maryam Nawaz, PDM, PML-N
27 مارچ 2021 (15:47) 2021-03-27

لاہور: نائب صدر مسلم لیگ (ن) مریم نواز نے کہا کہ اگر یہ عہدہ آپ کیلئے ضروری تھا تو نواز شریف سے رابطہ کرتے وہ دے دیتے ، پیپلز پارٹی کو سلیکٹ ہونا ہے تو عمران خان کی پیروی کریں ۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مریم نواز نے کہا کہ صادق سنجرانی نے سینیٹر افضل تارڑ سے رابطہ کیا اور باپ کے 4 ووٹوں کی پیشکش کی ، افضل تارڑ نے برملا جواب دیا وہ اپنی پارٹی کے فیصلے کے پابند ہیں ۔

انہوں نے کہا کہ ان کو تسلیم کرنا چاہئے انہیں باپ نے ووٹ دیا ہے ، باپ ووٹ صرف باپ کے کہنے پر ہی دیتا ہے ۔ لیگی رہنما نے کہا کہ باپ صادق سنجرانی کے کہنے پر ووٹ نہیں کرے گا ، باپ نے آصف زرداری کے کہنے پر ووٹ دیا ہے ۔ بھاری ہونا سب کو آتا ہے ، اصول پر رہنا سب سے اچھی بات ہے ۔

مریم نواز نے کہا کہ کوشش ہے سربراہ پی ڈی ایم کا اس پر مؤقف سامنے آجائے ، اس بات کا افسوس ہے آپ نے چھوٹے سے عہدے کیلئے عوام کے حق حکمرانی کو نقصان پہنچایا ۔ اصل میں آپ کو یہ شکست ہوئی ہے ، یہ چھوٹا سا وقتی فائدہ ہے جس پر باپ سے ووٹ لے لیا گیا ۔

نائب صدر ن لیگ نے کہا کہ پی ڈی ایم میں شامل دیگر جماعتیں اصول پر کھڑی ہیں ۔ عوام جن کے ساتھ کھڑے ہیں وہی جماعتیں آگے بڑھتی ہیں ، پہلی بار دیکھا اپوزیشن لیڈر کو حکومتی ارکان منتخب کرتے ہیں ، اپوزیشن تو مسلم لیگ (ن) ، جے یو آئی اور دیگر جماعتیں ہیں ۔

مریم نواز نے کہا کہ جمہوری اقدار پر بھروسہ کرتے ہیں ، ڈیل کرکے نکل نہیں جاتے ، پرویز مشرف پوری دنیا کے سامنے نشان عبرت بن چکے ہیں ۔

انہوں نے کہا کہ ایک طرف وہ لوگ ہیں جو عوام کیلئے آواز بلند کرتے ہیں ، عوام کے حقوق کیلئے وہ لوگ تمام مشکلات برداشت کر رہے ہیں ۔ دوسری طرف وہ لوگ ہیں جو اپنے چھوٹے مفادات کو ترجیح دے رہے ہیں ، انہیں عوام کے مفادات کا کوئی خیال نہیں ۔


ای پیپر