Maryam Aurangzeb
27 مارچ 2021 (13:02) 2021-03-27

لاہور: پاکستان مسلم لیگ ن کی ترجمان مریم اورنگزیب نے کہا کہ جب چوری اور ڈاکہ پورا ہو گیا تو جہانگیر ترین ، عامر کیانی اور اب بابر ندیم کو ہٹا دیا گیا ۔ اگر ملک میں احتساب ہوتا تو جیل میں عمران خان ، عثمان بزدار ، جہانگیر ترین ، عامر کیانی اور ندیم بابر ہوتے ۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مریم اورنگزیب نے کہا کہ عمران خان جنہیں چور کہتے ہیں ان کے دور میں کوکنگ آئل 142 روپے تھا ، آج کوکنگ آئل 290 ، چینی 120 اور آٹا 90 روپے کلو ہے ۔ چور چور کا شور کرتے ملک کو آئی ایم ایف کا غلام بنا دیا ۔

انہوں نے کہا کہ یہ نااہل ٹولہ صرف وارداتیں کر رہا ہے جبکہ عوام سے 50 لاکھ گھر اور ایک کروڑ نوکریوں کا جھوٹ بولا گیا ۔

لیگی رہنما نے کہا کہ عمران نیازی کہتا تھا کہ جب مہنگائی ہو تو وزیراعظم چور ہوتا ہے ، عمران خان کے دور میں چینی 120 روپے کلو فروخت ہوئی جبکہ ن لیگ کی حکومت میں چینی 52 روپے کلو فروخت ہو رہی تھی ۔ کہتے ہیں حمزہ شہباز کی وجہ سے چینی کی قیمت بڑھی ، حکمران چینی انکوائری کمیشن رپورٹ پر عوام سے جھوٹ بول رہے ہیں ۔ رپورٹ میں جن افراد کو ذمےدار ٹھہرایا گیا وہ ملک پر مسلط ہیں ۔

مریم اورنگزیب نے کہا کہ تبدیلی سرکار نے آتے ہیں قرضہ کمیشن بنایا لیکن قرضہ کمیشن کی رپورٹ آج تک نہیں آئی ۔ انہوں نے کہا کہ شہزاد اکبر کاغذ لہرا کر شہباز شریف کے خلاف الزام لگاتے تھے ، شہزاد اکبر عمران خان کے فرنٹ مین اور ٹاؤٹ ہیں ، شہزاد اکبر کے بقول سابق حکومتوں نے چینی پر سبسڈی دی جس کی وجہ سے چینی مہنگی ہوئی ۔

ترجمان ن لیگ نے کہا کہ چینی پر کمیشن بنا تو 72 روپے فی کلو چینی تھی لیکن جب انکوائری مکمل ہوئی تو چینی کی قیمت 92 روپے تھی اور آج چینی کی آج قیمت 120 روپے کلو ہے ۔

مریم اورنگزیب نے کہا کہ ملک پر مافیا عمران خان اور حواریوں کی شکل میں مسلط ہے ، جب تک مافیا مسلط ہے چینی ، دوائی ، آٹا مہنگا ہی رہے گا ۔ انہوں نے کہا کہ ہیلی کاپٹر ، بی آر ٹی ، دوائی چوری معاملے پر نیب کدھر ہے ۔

لیگی رہنما نے کہا کہ کرپٹ حکومت کی جانب سے بزدار صاحب کے پھوپھا کو اسپیشل برانچ کا ڈائریکٹر لگا دیا گیا ۔ انہوں نے کہا کہ آپ کے کاغذ لہرانے سے نواز ، شہباز اور حمزہ چور نہیں ہوں گے ، آپ چور کہتے ہیں تو عدالتوں میں ثبوت کیوں پیش نہیں کرتے ، آپ کے پاس ثبوت نہیں ہیں ۔


ای پیپر