کرسی آنی جانی چیز ہے ،خورشید شاہ کا وزیر اعظم کو الٹی میٹم
27 مارچ 2018 (17:33) 2018-03-27

اسلام آباد: قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف سید خورشید شاہ نے کہا ہے کہ وزیراعظم سمیت مسلم لیگ (ن) کو کیا ہو گیا ہے کہ ہر ادارے کی توہین پر اتر آئے ہیں،رضا ربانی کے دور میں چیف جسٹس اور آرمی چیف اس ایوان میں آئے،ان کی آمد سے پارلیمنٹ کے وقار میں اضافہ ہوا، شکوک و شبہات ختم ہوئے،ادارے حکومت اور ملک کو مضبوط کرتے ہیں،چیئرمین سینیٹ کے انتخاب سے متعلق وزیراعظم کو غلط فہمی ہے ،صادق سنجرانی سے ملنے سے انکارکیا ،جس پر افسوس ہے ،وزیراعظم نے ایک ادارے کی توہین کی ہے ، کرسی آنی جانی چیز ہے ادارے قائم رہتے ہیں۔

منگل کو میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے قائد حزب اختلاف سید خورشید شاہ نے کہا کہ وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی سے ملنے سے انکارکیا ،جس پر افسوس ہے ،وزیراعظم نے ایک ادارے کی توہین کی ہے ، کرسی آنی جانی چیز ہے ادارے قائم رہتے ہیں،وزیراعظم کے الفاظ قابل شرم ہیں اور قابل مذمت بھی،چیئرمین سینیٹ کے انتخاب سے متعلق وزیراعظم کو غلط فہمی ہے ،چیئرمین سینیٹ کے لیے اوپن اور کلیئر ووٹ ہوا ہے ،اپوزیشن جماعتوں سمیت مسلم لیگ (ن) کے3 ارکان نے صادق سنجرانی کو ووٹ دیا ہے .

کیا وزیراعظم چیئرمین سینیٹ کی رولنگ پر ایوان میں نہیں آئیں گے؟وزیراعظم کے ایوان میں آنے پر ان کا رویہ کیسا ہو گا؟وزیراعظم بلانے پر نہ آ کر کیا توہین پارلیمنٹ کریں گے؟کیا وزیراعظم ایوان میں آنے پر نہیں بیٹھیں گے؟کیا وزیراعظم پارلیمنٹ کی بات ماننے سے انکار کر دیں گے؟ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم سمیت مسلم لیگ (ن) کو کیا ہو گیا ہے کہ ہر ادارے کی توہین پر اتر آئے ہیں،رضا ربانی کے دور میں چیف جسٹس اور آرمی چیف اس ایوان میں آئے،ان کی آمد سے پارلیمنٹ کے وقار میں اضافہ ہوا، شکوک و شبہات ختم ہوئے،ادارے حکومت اور ملک کو مضبوط کرتے ہیں۔


ای پیپر