اےسی اتارنے سے میرے بھائی کی جان کو خطرہ ہے : شہباز شریف
27 جولائی 2019 (20:01) 2019-07-27

لاہور : پاکستان مسلم لیگ (ن) کے صدر اور قائد حزب اختلاف شہباز شریف نے چیف سیکرٹری پنجاب کو خط میں کہا ہے کہ محمد نواز شریف کی جیل سے اے سی اتارنے کا خط پنجاب حکومت کے میڈیکل بورڈ کی سفارشات کی خلاف ورزی ہے ۔

خط میں شہباز شریف لکھا ہے کہ آپ کی توجہ پنجاب حکومت کے تشکیل کردہ بورڈ کی سفارشات کی جانب مبذول کرانا چاہتا ہوں،میڈیکل بورڈ کی سب سے پہلی پہلی سفارشی یہی ہے کہ محمد نواز شریف کو مناسب درجہ حرارت والے کمرے میں رکھا جائے،بورڈ نے اپنی رپورٹ میں بتایا کہ مناسب درجہ حرارت میں نہ رکھنے سے ان کے گردے فیل ہو سکتے ہیں،محکمہ داخلہ کی سرد مہری پر پر حیران ہوں کہ محمد نواز شریف کی صحت سے متعلق کلیدی نکتہ کو کیسے نظر انداز کردیا گیا،سیاسی انتقام کی خاطر یہ اقدام میرے قائد اور بھائی کی جان پر حملہ ہے ،محمد نواز شریف کے کمرے سے اے سی اتارنے کا مطلب میڈیکل بورڈ کی سفارشات کی خلاف ورزی ہے ۔

شہباز شریف نے مزید لکھا کہ اس اقدام کے محمد نواز شریف کی صحت پر انتہائی مضر اثرات ہوں گے،میڈیکل بورڈ کی سفارشات پر ان کی روح کے مطابق عمل کیا جائے،تین مرتبہ کے منتخب وزیر اعظم کو سیاسی دباؤ کی بناء پر ان کے قانونی اور جائز حقوق سے محروم نہ کیا جائے،مجھے یقین ہے کہ آپ اس اقدام کے سنگین نتائج اور دانستہ نواز شریف کی صحت پر ہونے والے اثرات سے آگاہ ہیں، شہباز شریف کے خط کی کاپیاں چیف جسٹس پاکستان، چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ، ایڈیشنل چیف سیکریٹری داخلہ پنجاب اور آئی جی جیل خانہ جات کو بھی بھیجی گئی ہیں۔

یاد رہے کہ پنجاب حکومت نے آئی جی جیل خانہ جات کو 17 جولائی کو خط لکھ کر اے سی اتارنے کی ہدایت کی ہے ،خط کے مطابق یہ اقدام وزیراعظم کے حکم پر کیا جا رہا ہے ۔


ای پیپر