Opposition parties, negative propaganda, foreign loans, Shibli Faraz, Federal minister
27 جنوری 2021 (15:57) 2021-01-27

اسلام آباد: وفاقی وزیر اطلاعات شبلی فراز نے کہا ہے کہ حکومت سنبھالی تو خسارا زیادہ تھا ، ماضی کی حکومت نے ڈالر کو مصنوعی طریقے سے مستحکم رکھا تھا ، ڈالر کو برقرار رکھنے سے امپورٹ بڑھ گئیں اور کرنسی ڈی ویلیو ہوئی۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شبلی فراز نے کہا کہ اپوزیشن قرضوں سے متعلق منفی پروپیگنڈا کرتی ہے ، 11 کھرب کے قرضوں میں 6 کھرب سود ادا کیا ، ڈالر کی قیمت کم ہونے سے 3 کھرب کے قرضوں میں اضافہ ہوا۔ ڈیڑھ کھرب وبائی بحران میں عوام کو سہولیات کی مد میں دیئے گئے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان میں ڈی انڈسٹرلائزیشن بھی ہوئی ، معیشت چلانے کیلئے مشکل فیصلے بھی کیے ، کرنٹ اکاؤنٹ خسارا صفر پر لے آئے ہیں۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ اسٹیٹ بینک کے ذخائر میں اضافہ ہوا ہے ، ایکسپورٹس اور ترسیلات میں بھی اضافہ ہوا ہے ، معیشت بحالی کے مثبت اثرات عوام تک بھی پہنچیں گے۔ انہوں نے کہا کہ حکمرانوں نے کرپشن کی اور عوام غریب ہوئے۔

شبلی فراز نے کہا کہ سینیٹ الیکشن میں چند ہفتے رہ گئے ہیں ، وزیراعظم نے کہا ہے سینیٹ الیکشن شفاف ہونے چاہیئں ، ہمارا جمہوری فرض ہے براڈشیٹ کیس کی تحقیقات کریں ، انکوائری کمیشن ایکٹ کے تحت براڈشیٹ معاملے کی تحقیقات ہوں گی۔ پارٹی میں ممبران کی رائے ہوتی ہے ، تجاویز پیش کرتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ وزیراعلیٰ پنجاب برقرار رہیں گے ، وزیراعظم کے فیصلے پر ممبران لبیک کہتے ہیں ، پی ڈی ایم ہر بار ناکام ہوتی آئی ہے۔ جہاز کی لیز سے متعلق کمپنی سے مذاکرات جاری ہیں۔


ای پیپر