Soldiers, Pak Army, crowd, people, ointment, Abhinandan
27 فروری 2021 (11:39) 2021-02-27

نیو دہلی: بھارتی پائلٹ ابھی نندن نے کہا کہ پاک فوج کے جوانوں نے اسے لوگوں کے ہجوم سے بچایا اور اس کی مرہم پٹی بھی کرائی۔

ستائیس فروری کے حوالے سے اپنے بیان میں بھارتی پائلٹ ابھی نندن نے کہا کہ پیراشوٹ سے اترتے ہوئے اسے بھارت اور پاکستانی سرزمین میں کوئی فرق محسوس نہیں ہوا ، لوگ بھی ایک جیسے لگے ، اسے یہ اندازہ تک نہ ہوسکا وہ پاکستان میں ہے یا بھارت میں۔

ابھی نندن نے مزید کہا کہ پتہ اس وقت چلا جب پاکستانی شہریوں نے اسے دبوچ لیا ، ابھی نندن نے بتایا کہ پاک فوج کے جوانوں نے اسے لوگوں کے ہجوم سے بچایا اور اس کی مرہم پٹی بھی کرائی۔

واضح رہے کہ میدان جنگ میں دشمن سے حسن سلوک پاک فوج کا طرہ امتیاز ہے ، بھارتی پائلٹ سے پاکستان کے حسن سلوک کی پوری دنیا معترف ہے۔

پاک فوج کے بریگیڈیئر منیر نے بتایا کہ ابھی نندن کا کس طرح خیال رکھا گیا اور اسے محفوظ مقام تک پہنچایا گیا ، انہوں نے بتایا کہ زخمی ہونے کے باوجود ابھی نندن کا رویہ جارحانہ تھا ، لیکن کیپٹن عبداللہ نے نہایت حوصلے سے اس کا علاج کیا۔

یاد رہے کہ طاقت کے نشے میں دھت نالائق بھارتی پائلٹ ابھی نندن زمین پر اترا تو اس کی تلاش آسان نہیں تھی ، لیکن کیپٹن حسیب پہلے اُس تک پہنچے اور اسے عوام کے غیض و غضب سے بچایا۔

پاک فوج کے بہادر حوالدار نذر اور نائیک عثمان نے ابھی نندن کو کھائی سے بحفاظت نکال کر گاڑی تک پہنچایا جس میں اسے طبی امداد کیلئے ہسپتال لے جایا گیا ، جہاں پاک فوج کے ڈاکٹروں نے اس کی مکمل دیکھ بھال کی۔


ای پیپر