Shamima Begum,bride,Syria,British national,uk supreme court,
27 فروری 2021 (09:34) 2021-02-27

لندن: برطانیہ کی سپریم کورٹ نے کہا ہے کہ نو عمری میں برطانیہ سے شام جا کر مجاہدین کیساتھ شادی کرنے والی شمیمہ بیگم کو برطانیہ آنے آکر اپنی برطانوی شہریت کینسل کرنے کے کیس کو چیلنج کرنے کی قطعا اجازت نہیں ہے۔

برطانوی عدالت نے شمیمہ بیگم کی سماعت کرتے ہوئے مکمل اتفاق رائے سے فیصلہ دیا کہ شمیمہ بیگم کے حقوق سلب نہیں ہوتے جب اسے برطانیہ واپس آنے کی اجازت نہیں ملتی۔ شمیمہ بیگم کے وکلا نے عدالت میں دلائل دئیے کہ اسے برطانیہ میں واپس آکر اپنا کیس لڑنے کی اجازت ملنی چاہیے۔لیکن برطانوی عدالت نے اتفاق رائے سے اس اپیل کو مسترد کرنے ہوئے کہا کہ برطانیہ کی قومی سلامتی پہلے نمبر پر آتی ہے اور شمیمہ کو برطانیہ آنے کی اجازت نہیں دی جا سکتی۔

یا د رہے کہ شمیمہ بیگم کو گزشتہ سردیوں میں ہیٹ اور جینز کی پینٹ پہنے شمالی شام میں دیکھا گیا تھا۔ شمیمہ 15سال کی عمر میں شام میں مجاہدین کی بیوی بننے کیلئے برطانیہ سے آئی تھیں۔برطانوی وزیر داخلہ نے شام جانے کی پاداش میں اس کی برطانوی شہریت پر پابندیاں لگا دی تھیں۔برطانیہ سے فرار ہوتے ہوئے شمیمہ بیگم کے ساتھ ان کی دو سہیلیاں بھی تھیں جن کے بارے میں اطلاعات ہیں وہ ہلاک ہو چکی ہیں۔شمیمہ بیگم نے وہاں شادی کی ٗ اس کے تین بچے بھی ہوئے مگر وہ تینوں مارے گئے۔


ای پیپر