Vaccination, EU countries, WHO, new virus, US
27 دسمبر 2020 (15:08) 2020-12-27

لندن: عالمی وبا کو شکست دینے کے لیے یورپی یونین کے متعدد ممالک میں بڑے پیمانے پر ویکسین لگانے کا عمل شروع کر دیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق جرمنی ، اٹلی ، فرانس اور اسپین سمیت 27 رکنی یونین کے متعدد ممالک میں پہلے مرحلے میں معمر شہریوں اور طبی عملے کو ویکسین مہیا کی جا رہی ہے۔

خیال رہے کہ بائیون ٹیک اور فائزر کی بنائی گئی ویکسین کی بڑی مقداد یورپی یونین کے زیادہ تر ممالک میں پہنچائی جا چکی ہے۔ یورپی میڈیسن ایجنسی نے اس ویکسین کی منظوری رواں ہفتے کے آغاز میں دی تھی۔

واضح رہے کہ دنیا بھر میں عالمی وبا سے ہلاکتوں کی تعداد 17 لاکھ 64 ہزار 563 ہو گئی ہے جبکہ 8 کروڑ 71 لاکھ 5 ہزار سے زائد متاثر ہوئے ہیں۔ امریکا میں عالمی وبا سے مزید 1408 اموات ہوگئی جس کے بعد تعداد 3 لاکھ 39 ہزار 921 ہو گئی ہے۔

جاپان میں بھی وبا کی نئی قسم کا پہلا کیس رپورٹ ہو گیا، جس کے بعد جاپانی حکومت نے 28 دسمبر سے ملک میں غیر ملکیوں کے داخلے پر پابندی کا فیصلہ کر لیا ہے۔

یاد رہے کہ غیر ملکیوں کے جاپان میں داخلے پر پابندی جنوری کے آخر تک نافذ رہے گی۔

دوسری جانب سربراہ عالمی ادارہ صحت نے بھی خبردار کر دیا کہ عالمی وبا دنیا کی آخری وبا نہیں وقت آگیا ہے کہ ہم اس سے سبق سیکھیں۔

ادھر پاکستان میں ایس او پیز کی خلاف ورزی کے باعث عالمی وبا اور بھی تیزی سے پھیل رہی ہے۔ 24 گھنٹوں کے دوران مزید 58 مریض جان سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں۔

ایس سی او سی کی جانب سے جاری اعداد و شمار کے مطابق ایک ہزار 853 نئے کیسز رپورٹ ہوئے، اس طرح ملک بھر میں ایکٹو کیسز 39 ہزار 329 ہو گئی ہے۔

وبا کو شکست دینے والوں کی شرح بڑھنے لگی 24 گھنٹوں کے دوران صحت یاب ہونے والوں کی شرح 6۔89 فیصد رہی۔ اب تک 4 لاکھ 22 ہزار 132 مریض صحتیاب ہو چکے ہیں۔


ای پیپر