Federal Minister, Fawad Chaudhry, big demand, Bilawal, Maryam Nawaz
27 دسمبر 2020 (14:27) 2020-12-27

اسلام آباد: وفاقی وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چودھری نے کہا کہ 3 خاندان اپنی سیاست اپنی میراث میں منتقل کرنا چاہتے ہیں۔ پاکستان اقتدار کے جھولے جھولنے کا مرکز بنا ہوا ہے۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے فواد چودھری نے کہا کہ ملک حالت جنگ میں ہے لیکن کچھ لوگوں کی دشمنوں سے محبتیں ختم نہیں ہو رہیں۔ اسٹیبلشمنٹ کی سب سے لاڈلی شریف فیملی رہی، اسرائیل اور بھارت کی لابی نے نواز شریف کو قابو کیا۔

انہوں نے کہا کہ کارگل جنگ میں نواز شریف نے 5 بار واجپایہ سے رابطہ کیا ، نواز شریف محسنوں کو بھلا کر اسرائیل بھارت کی لابی کا حصہ بن گئے۔ اجمل قادری نے اسرائیل سے تعلقات کا کچا چٹھا کھولا۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ اپوزیشن کی تحریک ختم ہو چکی ، ن لیگ اور پیپلزپارٹی کے درمیان تقسیم نظر آرہی ہے۔ وزیراعظم نے اپوزیشن سے مذاکرات کا کہا اور فورم بھی دیدیا۔ انہوں نے کہا کہ اپوزیشن میں سنجیدہ لوگ آگے بڑھیں، ملک کیلئے کام کرتے ہیں۔

فواد چودھری نے واضح کیا کہ شہباز شریف کو ہم نے جیل میں نہیں رکھا ، شہباز شریف قانونی کاغذی کارروائی پوری کرکے باہر آجائیں۔ اس وقت سیاست شخصیات کے گرد گھوم رہی ہے ، ایشوز پر نہیں۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ پیپلزپارٹی سکڑ کر صرف سندھ تک محدود ہو گئی ہے ، پیپلزپارٹی وفاق کے نعروں سے دور ہوتی جا رہی ہے۔ پاکستان جمہوری جدوجہد کے نتیجےمیں وجود میں آیا ، پاکستان کی سیاست سے بھی بادشاہت ختم ہو رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ مریم نواز نے ایک دن بھی اپنا کچن نہیں چلایا کیونکہ وہ ابو کے ساتھ رہتی تھیں ، مریم ایک دن کام کیے بغیر وزیراعظم بننا چاہتی ہیں ، مریم کو چاہیے شہباز شریف کی مل میں بھرتی ہو کر کاروبار کو سمجھیں۔

مریم نواز کی خواہشات دیکھیں وزیراعظم بننا چاہتی ہیں ، ابو نے کہا میں تو باہر بیٹھ کر پیزا کھا رہا ہوں آپ ملک سنبھالیں۔ پاکستان کی وزارت عظمیٰ کیا انٹرن شپ ہے ، مریم نواز نے ابو کی چھینی ہوئی دولت پر عیش کی زندگی گزاری۔

فواد چودھری نے کہا کہ قوم جاننا چاہتی ہے بلاول اور مریم کا ایجنڈا کیا ہے ؟ ابو کے کیسز ختم کرنا ، واپس لانے کے اعلانات کوئی ایجنڈا نہیں۔ انہوں نے کہا کہ بلاول بھٹو کو لانگ مارچ مراد علی شاہ کے خلاف کرنا چاہیے۔


ای پیپر