امریکہ پہلی دفعہ صدارتی انتخاب کیلئے اہلکاروں کو فوجی ٹریننگ دینے آغاز
27 دسمبر 2019 (16:46) 2019-12-27

واشنگٹن:امریکی دارالحکومت واشنگٹن کے ایک ہوٹل میں ایک خصوصی تربیتی پروگرام کا آغاز ہوگیا ہے، جس میں وسیع جنگی تجربہ رکھنے والے فوجی اہلکار امریکہ کی 24 ریاستوں کے انتخابی اہلکاروں کو روس، چین اور دیگر ممالک کی جانب سے امریکہ کے آئندہ صدارتی انتخاب پر ممکنہ طور پر اثرانداز ہونے کی کوششوں سے نمٹنے سے متعلق امریکی فوج کے نقطہ نظر سے آگاہ کر رہے ہیں۔

میڈیارپورٹس کے مطابق فوجی اہلکاروں کا کہناتھا کہ انتخابی اہلکاروں کو امریکہ کے فوجی نقطہ نظر کو جاننا ضروری ہے، تاکہ ووٹنگ کے تقدس کو برقرار رکھا جا سکے۔یہ اقدام ظاہر کرتا ہے کہ 2016 کے صدارتی انتخاب میں مبینہ روسی مداخلت کے بعد امریکہ کی انٹیلی جنس اور نگرانی کے نظام ہائی الرٹ پر ہیں اور وہ ہر اس مشکوک سرگرمی پر کڑی نظر رکھے ہوئے ہیں جو امریکہ کے انتخابی عمل پر اثر انداز ہو سکے۔

تربیتی پروگرام میں شریک کیلی فورنیا کی یولو کانٹی کے چیف الیکشن افسر جیسی سیلینازنے کہاکہ یہ جنگ کا ایک مختلف درجہ ہے۔ وہ کہتے ہیں کہ آپ صرف ایسی چیزوں پر حملہ آور ہو سکتے ہیں جن کے بارے میں آپ کوئی خطرہ محسوس کرتے ہیں اور ہماری جمہوریت بہت سے ایسے ملکوں کیلئے خطرہ ہے جو ہمیں ناکام بنانے کیلئے کوشاں ہیں۔ لہذا، ہمیں جوابی حملہ کرنا ہو گا اور ہر خطرے کیلئے تیار رہنا ہو گا۔


ای پیپر