سکرین شوٹ

چین نے دنیا کے پہلے مصنوعی ذہانت سے لیس ہائی وے کی تیاری شروع کر دی
27 دسمبر 2018 (15:48) 2018-12-27

چین نے دنیا کے پہلے مصنوعی ذہانت سے لیس ہائی وے کی تیاری شروع کر دی۔ ہائی وے میں ڈرائیونگ سینسر اور فوٹو ولٹک سیلز کا استعمال کیا جائے گا۔

گاڑیوں کو حادثات سے بچانے کے لیے ہائی وے میں جدید وارننگ سسٹم بھی نصب کیا جائے گا۔ گاڑیوں میں نصب انٹرنیٹ سسٹم بغیر ڈرائیور کے گاڑی چلانے کی سہولت فراہم کرے گا۔ 6 لائنوں اور 161 کلومیٹر لمبا ہائی وے ہانگ زو کو ننگ بو سے ملائے گا۔ 30 ارب ڈالرز کی مالیت کا منصوبہ 2022 میں مکمل ہو گا۔


ای پیپر