فوٹو بشکریہ فیس بک

چیف جسٹس نے ریلوے اراضی پر ہاؤسنگ سوسائٹیز بنانے پر پابندی لگا دی
27 دسمبر 2018 (12:43) 2018-12-27

لاہور: چیف جسٹس آف پاکستان میاں ثاقب نثار نے ریلوے اراضی پر ہاؤسنگ سوسائٹیز بنانے پر پابندی لگا دی۔

چیف جسٹس کی سربراہی میں 3 رکنی بنیچ نے ازخود نوٹس کیس کی سماعت کی، ثاقب نثار نے ریلوے اراضی پر ہاؤسنگ سوسائٹیز بنانے پر پابندی لگا دی۔ چیف جسٹس نے کہا کہ ریلوے کی زرعی اراضی 3 سال کی مدت سے زائد دینے پر بھی پابندی عائد کر رہے ہیں۔

عدالتی احکامات پر وزیر ریلوے شیخ رشید خوش نظر آئے، کہتے ہیں چیف جسٹس نے قوم کو بڑی سہولت دی۔ انہوں نے کہا کہ سعد رفیق نے ریلوے کو ناقابل تلافی نقصان پہنچایا۔ وزیر ریلوے کے مطابق چیف جسٹس کے سامنے 123 کیس پیش کیے ہیں جن پر ماتحت عدالتوں نے حکم امتناعی جاری کر رکھا ہے۔

دوسری جانب سپریم کورٹ نے رائل پام کلب لاہور کو عدالتی تحویل میں لیتے ہوئے نئی انتظامیہ مقرر کردی۔ میسرز فرگوسن کو رائل پام کلب کا انتظام دیتے ہوئے حکم دیا کہ تمام ریکارڈ قبضے میں لے لیں اور پرانی انتظامیہ کی کلب میں داخلے پر پابندی لگا دی۔ سپریم کورٹ نے لاہور ہائیکورٹ کے کلب سے متعلق تمام احکامات غیر موثر کرتے ہوئے حکم دیا کہ رائل پام کلب کی تمام سرگرمیاں معمول کے مطابق چلائی جائیں۔


ای پیپر