Violations of SOPs during examinations will be reviewed in NCOC meeting: Shafqat Mahmood
کیپشن:   فائل فوٹو
27 اپریل 2021 (09:58) 2021-04-27

اسلام آباد: وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود نے کہا ہے کہ این سی او سی اجلاس میں امتحانات کے دوران ایس او پیز اور کورونا کے پھیلاؤ کی رپوٹ کا جائزہ لیا جائے گا۔

سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹویٹر پر جاری اپنے بیان میں شفقت محمود نے لکھا کہ امتحانات کی اجازت سخت ایس او پیز پر عمل پیرا ہونے سے مشروط تھی لیکن امتحانی مراکز کے باہر اس پر عمل درآمد کمزور ہے۔ یہ تمام چیزیں این سی او سی اجلاس کے سامنے رکھیں گے۔

اس سے قبل ایک ٹیلی وژن پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے شفقت محمود نے کہا تھا کہ طلبہ کہہ رہے ہیں کہ امتحان بھی نہ لیں اور انہیں ٹیچرز گریڈز پر پاس بھی کر دیں۔ کیمبرج نے اس کا حل دیا۔ نتظامات ٹھیک ہیں، صرف کچھ ہالز میں بچوں کی تعداد زیادہ تھی، اس پر بات کی ہے۔

وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود نے شکوہ کیا کہ سولہ سترہ سال کے بچے کیمبرج امتحانات کے معاملے پر ٹویٹر پر جو زبان استعمال کر رہے ہیں، میں سمجھتا ہوں بحیثیت والدین، اساتذہ، حکومت یہ ہم سب کی مشترکہ ناکامی ہے، یہ افسوسناک ہے۔

کیمرج امتحانات بارے بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ ہم نے مشترکہ طور پر یہ فیصلہ کیا تھا۔ ان کا کہنا تھا کہ گزشتہ سال کورونا کی وبا آتے ہی سارے امتحانات کو ملتوی کر دیا گیا تھا۔ اس کے بعد مختلف فارمولے اپنائے گئے تاکہ طلبہ کی تعلیم پر کوئی حرج نہ ہو۔

ان کا کہنا تھا کہ مثلاً 9، 10، 11 اور 12ویں کلاسوں کیلئے یہ فارمولہ اپنایا گیا تھا کہ ایک سال پہلے کے امتحانات کی بنیاد پر طلبہ کو پاس کر دیا جائے۔ تاہم کیمرج امتحانات کیلئے یہ صورتحال نہیں تھی، اس کیلئے یہ فارمولہ اپنایا گیا کہ ٹیچرز جو گریڈز دیتے ہیں، اس کی بنیاد پر ہی طلبہ کو پاس کر دیا جائے لیکن یہ گریڈز جب کیمرج کے پاس گئے تو انہوں نے اس پر اعتراض اٹھایا، اس لئے چار ماہ پہلے ہی فیصلہ کر لیا تھا کہ امتحانات لئے جائیں گے۔


ای پیپر