فردوس عاشق اعوان کو اچانک عہدہ سے کیوں ہٹایا گیا ،اندرونی کہانی سامنے آگئی
27 اپریل 2020 (19:56) 2020-04-27

اسلام آباد : فردوس عاشق اعوا ن کی اچانک برطرفری کے بعد سوشل میڈیا سمیت کئی نجی ٹی وی چینلز پریہ خبریں عام ہو رہی ہیں کہ انہیں کرپشن کی وجہ سے عہدہ سے ہٹا دیا گیا ہے ۔

تفصیلات کے مطابق معاون خصوصی برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان پر یہ الزام عائد کیا جا رہا ہے کہ انہوں نے سرکاری اشتہارات پر 10 فیصد کمیشن لینے کی کوشش کی ،اس کے علاوہ انہوں نے اپنے اختیارات کا ناجائز استعمال بھی کیا ،ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان کے حوالے سے وزیر اعظم کو رپورٹ پیش کی گئی تھی جس کے بعد انہیں عہدے سے ہٹایا گیا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے بطور معاون خصوصی اختیارات کا ناجائز استعمال اور کرپشن کی۔ انہوں نے میڈیا کو جاری کیے جانے والے حکومتی اشہتارات سے 10 فیصد کمیشن لینے کی کوشش کی۔

ذرائع نے بتایا کہ ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے سرکاری ٹی وی کے کوٹے پر ضرورت سے زائد ملازم رکھے، انہوں نے بغیر اجازت 2 سکیورٹی گارڈز سمیت 9 ملازم رکھے ہوئے تھے، انہوں نے 2 گاڑیاں بھی لے رکھی تھیں جس کی انہیں اجازت نہیں تھی۔


ای پیپر