فوٹوبشکریہ فیس بک

چیف جسٹس نے نجی ہسپتالوں کی کمائی کی تفصیلات طلب کرلیں
26 اکتوبر 2018 (15:14) 2018-10-26

کراچی: سپریم کورٹ نے حکم دیا ہے کہ تمام نجی ہسپتال کمروں کے کرائے، آکسیجن، وینٹی لیٹر و دیگر سہولیات کے ریٹس کی تفصیلات کل تک جمع کرائیں۔

نجی ہسپتال میں مہنگے علاج سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی تو چیف جسٹس نے کہا کہ کوئی ہسپتال مستثنیٰ نہیں، سب کو بتانا ہوگا کون کتنا کما رہا ہے ؟؟؟ تمام ہسپتال غریبوں کے لیے کم سے کم 20 بیڈ مختص کر دیں۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ ضیاء الدین ہسپتال میں پچھلے 15 دنوں میں کتنے مریضوں کا مفت علاج ہوا۔

دوران سماعت چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ شرجیل میمن کو ضیا الدین ہسپتال کے جس کمرہ میں رکھا گیا، اس کا کرایہ کتنا ہے؟ ہسپتال انتظامیہ نے آگاہ کیا کہ شرجیل میمن کے کمرے کا کرایہ یومیہ 35 ہزار روپے ہے۔ جس پر ثاقب نثار نے کہا کہ ہسپتال کا کمرہ تو ہوٹل کے کمرے سے بھی زیادہ عالی شان لگ رہا تھا۔

ثاقب نثار نے ہسپتال کے مالک ڈاکٹر عاصم کو بیرون ملک جانے پر بھی برہمی کا اظہار کیا۔ کہا ڈاکٹر عاصم کو ملک سے باہر جانے کی اجازت کس نے دی؟ انہوں نے تو یقین دہانی کرائی تھی کہ نام ای سی ایل میں نہ ڈالیں بیرون ملک نہیں جاؤ ںگا۔


ای پیپر