'آرمی چیف کا معاملہ سپریم کورٹ کا مسئلہ ہے رائے نہیں دے سکتا'
کیپشن:   فائل فوٹو سورس:   
26 نومبر 2019 (15:23) 2019-11-26

اسلام آباد: مولانا فضل الرحمان سے صحافی نے سوال کیا کہ کیا آج کے سپریم کورٹ کے فیصلے کو آپ کی جدوجہد کے ساتھ منسلک کر سکتے ہیں؟ مولانا فضل الرحمان نے جواب دیتے ہوئے کہا پاکستان کو اللہ خوش رکھے، آپ خوش رہیں، سپریم کورٹ کا مسئلہ خالصتا سپریم کورٹ کا ہے اس پر کوئی رائے نہیں دے سکتا۔

واضح رہے کہ سپریم کورٹ نے آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع کا نوٹیفیکیشن روک دیا اور وفاق، صدر مملکت، وزیراعظم اور آرمی چیف کو نوٹسز جاری کر دیے گئے، کیس کی مزید سماعت اب کل ہو گی۔

درخواست گزار نے آرمی چیف کی مدت ملازمت کے خلاف اپنی درخواست واپس لینے کی درخواست کی، جسے عدالت نے مسترد کر دیا، چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ نے ریمارکس دیے کہ درخواست واپس لینے والی درخواست نہیں سن سکتے اور پھر مدت ملازمت کے توسیع کے معاملے کو ازخود نوٹس میں بدل دیا۔

یاد رہے کہ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کی مدت ملازمت 2 دن بعد 28 نومبر کو ختم ہو رہی ہے۔


ای پیپر