Afghanistan, Taliban, May, deadline, Joe Biden, Ashraf Ghani
26 مارچ 2021 (08:27) 2021-03-26

نیویارک: امریکی صدر جوبائیڈن نے کہا ہے کہ یکم مئی کی ڈیڈ لائن تک افغانستان سے نکلنا مشکل ہے ، انخلا سے متعلق نیٹو اور دوسرے ممالک سے مشورے کر رہے ہیں ۔

اپنے بیان میں جوبائیڈن نے کہا کہ آئندہ سال کا نہیں معلوم تاہم افغانستان میں زیادہ دیر نہیں رکیں گے ، انہوں نے کہا کہ سوال یہ ہے کس طرح کے حالات میں افغانستان سے انخلا کیا جائے ، طالبان معاہدے پر مکمل عمل درآمد کرتے نظر نہیں آرہے ۔

دوسری جانب طالبان نے افغان صدر کی ملک میں اس سال کے آخر تک صدارتی الیکشن کرانے کی پیشکش کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ صدر اشرف غنی ایک ایسے عمل کے بارے میں بات کر رہے ہیں، جو ہمیشہ ہی تنازعات کا باعث بنا ہے ۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق افغانستان کے صدر اشرف غنی نے امریکا کی جانب سے تمام فریقین پر مشتمل عبوری حکومت کے قیام کی تجویز سے اتفاق نہ کرتے ہوئے ملک میں دوبارہ صدارتی الیکشن کرانے کی پیشکش کی تھی تاہم طالبان نے صدر اشرف غنی کی پیشکش کو مسترد کردیا ہے ۔

طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے کہا کہ صدارتی الیکشن کی بہانے بازیوں نے ماضی میں بھی افغانستان کو بحران کے دہانے پر پہنچا دیا تھا ۔ صدر اشرف غنی ایک ایسے عمل کے بارے میں بات کر رہے ہیں ، جو ہمیشہ ہی تنازعات کا باعث بنا ہے ۔ ہم صدارتی الیکشن کی کسی صورت حمایت نہیں کریں گے ۔ افغانستان میں پائیدار امن اور خوشحال مستقبل کے بارے میں کوئی بھی فیصلہ فریقین کے مابین جاری مذاکرات کے ذریعے ہم آہنگ بنانا لازمی ہے ۔

واضح رہے کہ افغانستان میں امن معاہدے پر عمل درآمد میں تاخیر کے باعث فریقین کے درمیان پیدا ہونے والی نااتفاقی کے باعث نئی تجاویز سامنے آرہی ہیں ۔ امریکا نے تمام فریقین پر مشتمل عبوری حکومت بنانے کی تجویز دی جو ملک میں نئے انتخابات کے لیے قانون سازی بھی کرے گا ۔


ای پیپر