عازمین حج کو جعلی ویزوں پر بھجوانے کا سکینڈل سامنے آگیا
26 مارچ 2018 (22:13)

اسلام آباد : قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے مذہبی امور میں انکشاف ہوا ہے کہ حج2017میں475عازمین حج کو جعلی ویزوںپر حج پر بھجوایا گیا ۔کمیٹی نے پاسپورٹ امیگریشن ڈیپارٹمنٹ کو معاملے پر تحقیقات کر کے رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت کر دی ، وزارت مذہبی امور کے افسر کو مبینہ طور پر رقوم کے لین دین اور بدزبانی پر کمیٹی میں سزا کے طور پر کھڑا کر دیا گیا ۔پیرکوقومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے مذہبی امور کا اجلاس چیئرپرسن شگفتہ جمانی کی سربراہی میں پارلیمنٹ ہاﺅس میں ہوا۔ چیئر پرسن کمیٹی نے کہا کہ اسمبلی رولز کے مطابق کمیٹی کا ایجنڈا متعلقہ وزارت سے مشاورت کے بعد طے کیا جاتا ہے،سردار یوسف نے کمیٹی سے درخواست کی تھی کہ تیاری کےلئے وقت درکار ہے اجلاس موخر کیا جائے، مگرکمیٹی نے بروقت ایجنڈا اور نوٹس وزارت کو بھجوایا تھا،وزارت مذہبی امور سردار یوسف کے کندھے پر رکھ کر بندوق چلا رہی ہے،جس وفاقی وزیر سردار یوسف نے کہا کہ مفتی اعظم مصر کی آمد کے باعث وزارت مصروف رہی،معلوم نہیں ہماری درخواست کیوں مسترد کی گئی،مصروفیت کیوجہ سے بریفنگ نہیں تیار کرسکے، رکن کمیٹی رمیش لا ل نے واک آوٹ کی دھمکی دیتے ہوئے کہا کہ وزیر اور سیکرٹری فون تک نہیں سنتے ،میں وزارت مذہبی امور گیا سیکرٹری نے 15منٹ انتظار میں بٹھائے رکھا، واک آوٹ کرنا چاہتا ہوں جس سیکرٹری مذہبی امور خالد مسعود نے کمیٹی کو بتایا کہ اس دن4 گھنٹے تک حج میٹنگ تھی ڈاکٹر رمیش کمار ضرور آئے تھے ملکر کر چلے گئے.

رمیش لال اور رمیش کمار کی غلط فہمی میں الجھ گیا پھر بھی ان سے معذرت چاہتا ہوں۔وزیر مذہبی امور سردار یوسف نے کہا کہ بھارت نے اجمیر شریف کےلئے 500 پاکستانی زائرین کو آخری وقت میں ویزے دینے سے انکار کیا،وہاںپر پاکستانی زائرین کے ساتھ حکام کا رویہ درست نہیں ہوتا،وہ پاکستانی زائرین کو دہشتگرد سمجھ کر برا سلوک کرتے ہیں،پاکستانی زائرین کے ساتھ برے رویہ پر دفتر خارجہ نے بھارتی حکومت کے سامنے معاملہ اٹھایا ہے، رکن کمیٹی لال چند ملہی نے بتایا کہ لاہور گوالمنڈی میں سوامی نارائین مندر پر قبضہ کیا جارہا ہے،اس سے قبل معاملہ اٹھایا مگر جواب نہیں ملا، اویکیو ٹرسٹ کے حکام نے کمیٹی کوبتایا کہ سوامی نارائن مندر ایک خاتون کو لیز پر دیا گیا تھا معاملہ اب عدالت میں ہے، جس پر رکن کمیٹی لال چند ملہی نے کہاکہ یہ کیسے ممکن ہے کہ ایک مندر کسی کو لیز پر دیدیا جائے؟ وزارت کے لوگ ملی بھگت سے مندر پر قبضہ کروانا چاہتے ہیں، کمیٹی نے وزارت سے 2دن میں رپورٹ طلب کرلی ۔ رکن کمیٹی علی محمد خان کی صدارت میں منارٹی کمشن کی تشکیل کے بلز پر حتمی رائے دینے کے لئے ذیلی کمیٹی قائم کر دی گئی جس میں شاہدہ اختر علی، رمیش لال، صاحبزادہ یعقوب شامل ہو ں گے جبکہ 2اپریل کو اجلاس میں تمام سفارشات کو حتمی شکل دی جائے گی ۔ رکن کمیٹی علی محمد خان نے وزارت کے حکام سے استفار کیا کہ کٹاس راج کے 4 کلومیٹر کے اندر فاصلے پر سیمنٹ فیکٹری کو کس نے این او سی دیا؟ وزارت مذہبی امور یا اوکیو ٹرسٹ بورڈ نے اس معاملہ پر کیا ایکشن لیا؟ 2006 میں کن قوانین کے تحت کس نے کٹاس راج کے قریب سیمنٹ فیکٹریوں کو جگہ لیز پر دی؟ کیا چار کلومیٹر کے قریب ایسی فیکٹریوں کی اجازت دی گئی، کٹاس راج ہندووں کے لئے مقدس جگہ ہے اس کا پانی فیکٹریوں نے کھینچ لیا، اس سے پاکستان کی بدنامی ہورہی ہے کٹاس راج تالاب کی بحالی کے لئے فیکٹریاں بند بھی کرنا پڑیں تو کردی جائیںجس پرسیکرٹری اویکیو ٹرسٹ بورڈ حکام نے این او سی جاری ہونے پر لاعلمی کا اظہارکرتے ہوئے کہا کہ این او سی 2006 میں سابق حکومت نے جاری کیا تھا، اس وقت حکومت پرویز مشرف کی تھی ،ریکارڈ چیک کرکے معلومات فراہم کردی جائیں گی، ماحولیاتی ایجنسی اور پنجاب مائنز ڈیپارٹمنٹ نے فیکٹریوں کو جگہ لیز پر دی قائمہ کمیٹی برائے مذہبی امور کے اجلاس حج قرعہ اندازی پر وزارت مذہبی امور کی بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ 67 فیصد سرکاری کوٹہ لوگوں کی خواہش پر کیا گیا ، قائمہ کمیٹیوں نے بھی اس کی توثیق کی تھی، وزیر مذہبی امور سردار یوسف نے کہا کہ اسلام آباد ہائیکورٹ کی جانب سے 60/40کا فیصلہ آیا اس پر سپریم کورٹ سے رجوع کررہے ہیں، 50فیصد قرعہ اندازی کردی باقی 17 فیصد سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد کریں گے، انہوں نے کہا کہ سعودی حکومت نے امسال بھی 5 ہزار اضافی کوٹہ دینے کا فیصلہ کیا ہے،وزیر اعظم نے بھی خادمین حرمین شریفین کو خط لکھا دیا ہے، خط میں مردم شماری میں آبادی کے اضافے سے اگاہ کیا ہے، اگر سعودی حکومت نے اضافی کوٹہ دیا تو نجی ٹور آپریٹرز کو دیا جائے گا، اجلاس میں چیئرمین کمیٹی شگفتہ جمانی نے کہاکہ نجی ٹور آپریٹرز کمپنیوں کو نمبر دینے کا معاملہ وزیر مملکت پیر امین الحسنات کی سربراہی میں کمیٹی کا فائدہ کیا ہے اگر سولہ گریڈ کے افسر حکمت اللہ نے فیصلہ کرنا ہے۔ انہوں نے کہاکہ ان کے پاس ثبوت موجود ہیں مذکورہ افسر کرپشن اور مالی لین دین میں ملوث ہے ۔انہوں نے حکمت اللہ کو کمیٹی اجلاس میں بطور سزا کھڑا کردیا جس پر رکن کمیٹی علی محمد خان نے کہا کہ جو بھی سزا دینی ہے دیں مگر کھڑا کرکے تذلیل نہ کریں جس پر کمیٹی ارکان نے بھی وزارت کے افسرحکمت اللہ کو بٹھا دیا چیئرمین کمیٹی شگفتہ جمانی نے کہا کہ میرے سٹاف کو اس افسر نے دفتر سے دھکے دے کر نکال دیا ۔ سیکرٹری مذہبی امور خلاد مسعود نے کہا کہ حکمت اللہ صرف ریکارڈ کا رکھوالا ہے یہ کسی کمپنی کو نمبرز دے یا واپس نہیں لے سکتا ۔ وزیر مذہبی امور نے اجلاس کو مذکورہ افسر کی تحقیات کر کے کمیٹی کو آگاہ کرنے کے بارے میں یقیقن دلایا ۔ اجلاس میں چیئرمین کمیٹی شگفتہ جمانی نے الزام عائد کیا کہ مجاملہ ویزوں کا من پسند افراد کو دیا گیا ،وزارت مذہبی امور نے مجاملہ ویزہ لینے والوں کی نامکمل تفصیلات قائمہ کمیٹی کو دے دیں مجاملہ ویزہ لینے والوں کے قومی شناختی کارڈز نمبر لسٹ میں نہیں دیئے گئے کیسے پتہ چلے گا کہ جو 475مجاملہ دیئے گئے یہ کہاں کے تھے جس پر ارکان کمیٹی نے کہا کہ ہوسکتا ہے سارے کے سارے مجاملہ ویزے وزیر کے حلقے کے ہوں ۔ وفاقی وزیر نے جواب دیتے ہوئے کہا کہ ارکان اگر میرے حلقے کے ہوں تو کیا وہ پاکستانی نہیں ہیں چیئرمین کمیٹی نے کہا کہ میں بتاسکتی ہوں کن کن لوگوں کو مجاملہ ویزہ والوں کو ہوٹلوں میں وزارت نے ٹھہرایا گیا جو لسٹ دی گئی ہے اس میں کچھ نام جعلی ہیں مجھے اور بھی بہت کچھ پتہ چلا ہے ایسے لوگ جو حج پر تو نہیں جاتے مگر ان کانام لسٹ میں لکھ دیاجاتا ہے۔ جس پر وفاقی وزیر سردار یوسف نے کہا کہ ا ور کیا کیا پتہ چلا ہے اگر کسی نے مجاملہ والوں سے پیسے لئے ہیں تو ثبوت سامنے لائیں سزا دیں گے مجاملہ ویزے پر وزیر اعظم سپیکر وغیرہ کے لوگ بھی گئے، رکن کمیٹی علی محمد خان نے کہا کہ ایف آئی اے سے تحقیقات کرائی جائیں کہ جعلی حاجی کون سے تھے ۔


ای پیپر