Almi Waba
26 جنوری 2021 (20:14) 2021-01-26

 نیویارک:کووڈ 19 کے خلاف ویکسین تیار کرنے والی امریکی کمپنی موڈرنا کے سی ای او اسٹیفن بینسل نے کہا کہ اس وبا کے خلاف جنگ کے لیے ابھی بہت کچھ کرنا ہوگا۔اس کمپنی نے 25 جنوری کو ایک تحقیق کے ابتدائی نتائج جاری کیے تھے، جس کے مطابق اس کی تیار کردہ ویکسین کورونا وائرس کی نئی اقسام کے خلاف مؤثر ثابت ہوگی، تاہم اس کے خلاف جنگ میں ابھی کافی کچھ کرنا ہوگا۔

کمپنی کی جانب سے جاری ابتدائی نتائج میں عندیہ دیا گیا کہ ویکسین سے جسم میں متحرک ہونے والی اینٹی باڈیز نئی اقسام کو شناخت اور ان کے خلاف لڑتی ہیں تاہم کمپنی کے سی ای او کا کہنا تھا کہ ایسی وجوہات موجود ہیں، جن کو دیکھتے ہوئے کورونا وائرس کی نئی اقسام میں ہونے والی میوٹیشنز سے تحفظ کے لیے بوسٹر شاٹس کی ضرورت پڑسکتی ہے۔

یاہو فنانس لائیو کو دیئے گئے ایک انٹرویو میں انہوں نے کہا کہ میرا ماننا ہے کہ سارس کوو 2 انسانوں کے ساتھ اب ہمیشہ رہے گا، ہمیں فلو کی طرح اس وائرس کے حوالے سے بوسٹر شاٹس کی ضرورت ہوگی، فلو اور کورونا دونوں ایک جیسے ہیں یعنی ایم آر این اے وائرسز اور یہ ہمیشہ کے لیے ہماری زندگی کا حصہ بن چکے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ کمپنی کی تیار کردہ اوریجنل ویکسین بھی برطانیہ اور جنوبی افریقہ میں سامنے آنے والی اقسام کے خلاف تحفظ فراہم کرتی ہے، مگر اینٹی باڈیز کی شرح سابقہ اقسام کے مقابلے میں 6 گنا کم ہوتی ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ ویکسین کے استعمال سے مضبوط مدافعتی ردعمل پیدا ہوتا ہے جو کووڈ 19 کے شکا افراد پیدا ہونے والے قدرتی ردعمل جیسا ہوتا ہے اور یہ ویکسین نئی اقسام کے خلاف غیرمؤثر ثابت نہیں ہوگی۔


ای پیپر