Syed Wali Shah Afridi,columns,urdu columns,epaper,urdu news papers
26 جنوری 2021 (12:09) 2021-01-26

پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) نے اسلام آباد میں الیکشن کمیشن کے سامنے بھر پور سیاسی طاقت کا مظاہرہ کیا ۔ہزاروں کی تعداد میں لوگوں کو اکھٹا کرنے میں کامیاب ہوئی ۔پی ڈی ایم نے فارن فنڈنگ کیس چھ سال گزرنے کے باوجود فیصلہ نہ کرنے پر اسلام آباد میں الیکشن کمیشن کے سامنے احتجاج کیا ۔اپوزیشن جماعتوں کو پر امن احتجاج کاحق حاصل ہے ۔ملک میں جاری احتساب یکطرفہ ہورہا ہے ۔اپوزیشن ر ہنمائوں کو مختلف مقدمات میں گرفتار کیاجاتا ہے لیکن حکومت کے وزراء و مشیروں کے خلاف کارروائی نہیں کی جاتی ۔مسلم لیگ(ن)کے قائد محمد نواز شریف کے خلاف فیصلہ چھ ماہ میں ہوتا ہے جبکہ تحریک انصاف فارن فنڈنگ کیس کا چھ سال گزرنے کے باوجود بھی الیکشن کمیشن فیصلہ نہیں کر سکا۔ اپوزیشن کے لئے قانون الگ اور حکمران جماعت کے لئے الگ قانون ہے ۔اس طرح ملک نہیں چل سکتا ۔ملک میں تمام اداروں کو اپنی آئینی حدود میں رہ کر کام کرنا ہو گا اسی صورت میں ملک میں جاری سیاسی عدم استحکام کا خاتمہ ہو سکتا ہے ۔تمام اداروں کا جھکائو کسی ایک فرد یا ایک سیاسی جماعت کے لئے نہیں ہونا چاہیے ۔شخصیات اہم نہیں ہوتیں ملک اہم ہوتا ہے ۔جب تک ملک میں قانون کی حکمرانی نہیں ہوتی الیکشن شفاف طریقے سے نہیں کرائے جاتے۔ اقتدار حقیقی نمائندوں کے حوالے نہیں کیا جاتا ۔ملک میں جاری بحرانوں کا خاتمہ نہیں ہو سکتا ۔

الیکشن کمیشن میں فارن فنڈنگ کیس تحریک انصاف کے بانی رکن اکبر ایس بابر نے 2014ء میں دائر کیا تھا تحریک انصاف نے الیکشن کمیشن سے لے کر ہائیکورٹ میں کارروائی خفیہ رکھنے کی درخواستیں دائر کیں ۔اکبر ایس بابر نے قومی اخبار کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ ان پر سخت دبائو اور جان سے بھی مارنے کی دھمکیاں دی گئیں ۔فارن فنڈنگ کیس واپس لینے کے لئے ان پر جعلی مقدمات بھی قائم کر دیئے گئے لیکن انہوں نے ہر قسم کے دبائو و دھمکیوں کو مسترد کرتے ہوئے کسی صورت میں کیس واپس نہ لینے کا عہد کیا ہے۔ اپوزیشن رہنمائوں مولانا فضل الرحمان ،مریم نواز ،نیئر حسین بخاری،حیدر خان ہوتی اور آفتاب احمد خان شیرپائو نے اسلام آباد میں الیکشن کمیشن کے سامنے احتجاجی ریلی سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ تحریک انصاف کو غیر قانونی طور پر اسرائیل اور بھارت سے فنڈنگ ہوئی ۔الیکشن کمیشن فارن فنڈنگ کیس کو جلد منطقی انجام تک پہنچائے ۔پی ڈی ایم اسلام آباد کے احتجاج میں مسلم لیگ(ن)ایک بار پھر بازی لے گئی ۔مسلم لیگ(ن)کی قیادت نے ہزاروں کارکنوں اور عوام کو گھروں سے نکالا اور ریلی میں شرکت کرائی ۔مسلم لیگ(ن)خیبرپختونخوا کے جنرل سیکرٹری و ایم این اے مرتضیٰ جاوید عباسی ،ڈاکٹر عباد اللہ خان ایم این اے کی قیادت کی ہزاروں کارکنوں نے احتجاج میں شرکت کی ۔قائد محمد نواز شریف کی ہدایت پر مرتضیٰ جاوید عباسی نے مسلم لیگ(ن)کے پی کے کے مختلف اضلاع سے تعلق رکھنے والے پارٹی عہدیداروں سے رابطے کئے اور تمام اضلاع سے ہزاروں کارکن اسلام آباد پہنچے ۔مرتضیٰ جاوید عباسی میں یہ خصوصیت پائی جاتی ہے کہ کارکنوں کے ساتھ قریبی رابطے میں رہتے ہیں ۔ حکومت میں بھی ہوتے ہوئے کارکنوں کو عزت دیتے ہیں ۔اس وجہ سے کارکن ان کی ہدایت پر ہر جگہ پہنچ جاتے ہیں ۔مسلم لیگ(ن)کے تمام ایم این ایز ،سینیٹرز اور ایم پی ایز کو مرتضیٰ جاوید عباسی کی تقلید کرنی چاہیے ۔اسلام آباد پی ڈی ایم کی ریلی میں مسلم لیگ(ن)خیبرپختونخوا ایک بار پھر بازی لے گئی ۔

سابقہ وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی قیادت میں بھی بڑی ریلی نے احتجاج میں شرکت کی ۔پیپلز پارٹی کی ریلی کی قیادت نیئر حسین بخاری نے کی ۔جمعیت علماء اسلام کے ہزاروں کارکن الیکشن کمیشن کے سامنے پہنچ گئے تھے ۔مسلم لیگ(ن)کی مرکزی نائب صدر مریم نواز مری سے اسلام آباد پی ڈی ایم کے احتجاج میں شرکت کے لئے پہنچیں ۔راستے میں لیگی کارکنوں نے ان کا پرجوش انداز میں جگہ جگہ پر استقبال اور گل پاشی کی ۔قائد محمد نواز شریف کے حق میں نعرے لگاتے رہے ۔مریم نواز اپنے فقید المثال استقبال کو دیکھ کر بہت خوش ہوئیں اور نعروں کا خود جواب دیتی رہیں ۔پی ڈی ایم کے قائدین مولانا فضل الرحمان کے گھر سے خصوصی طور پر تیار کئے گئے کنٹینرز پر سوار ہو کر الیکشن کمیشن کے سامنے پہنچے ۔پی ڈی ایم نے اسلام آباد میں الیکشن کمیشن کے سامنے کامیاب پاور شوکیا ۔عوام پی ڈی ایم کی ریلی ،جلسوں اور جلوسوں میں شرکت کر رہے ہیں ۔تحریک انصاف کی ڈھائی سالہ حکومتی کارکردگی انتہائی مایوس کن ہے ۔معیشت بیٹھ گئی ہے ۔مہنگائی میں روزانہ کی بنیاد پر اضافہ ہورہا ہے ۔لوگوں کی قوت خرید و آمدن ختم ہو گئی ہے ۔عوام دو وقت کی روٹی کے لئے ترس گئے ہیں ۔قوم پی ڈی ایم کی طرف دیکھ رہی ہے ۔


ای پیپر