Terrorist, commander, Nuristan, operation, security forces, ISPR
26 فروری 2021 (15:44) 2021-02-26

راولپنڈی: جنوبی وزیرستان طیار زہ میں سیکیورٹی فورسز کی کارروائی میں دہشت گرد کمانڈر نورستان مارا گیا ۔

آئی ایس پی آر کے مطابق آپریشن دہشت گردوں کی موجودگی کی اطلاع پر کیا گیا ، دہشت گرد نورستان وزیرستان میں بڑی دہشت گرد کارروائیوں کا ماسٹر مائنڈ تھا ۔ دہشت گرد نورستان 50 سیکیورٹی اہلکاروں کو شہید کرنے میں ملوث تھا ۔ اس کے علاوہ دہشت گرد نورستان بارودی سرنگیں بنانے کا ماہر تھا ۔

آئی ایس پی آر کے مطابق دہشت گرد نورستان 2007 میں ٹی ٹی پی بیت اللہ محسود گروپ میں شامل ہوا ، دہشت گرد نورستان مارشل آرٹس کا بھی ماہر تھا ۔

خیسورا حملے کے نتیجے میں سیکیورٹی فورسز کے 5 جوان شہید ہوئے ، دہشت گرد نورستان نے 2008 میں شوال درگئی پوسٹ پر حملہ کیا ۔ 2008 کے دوران حملے میں ایف سی کے 3 جوان شہید ہوئے ۔

دہشت گرد نورستان نے جون 2009 میں خیسورا میں بارودی سرنگ بچھائی تھی ، 7 جون 2009 کو کمانڈر نورستان نے شکئی کیمپ پر راکٹوں سے حملہ کیا ، شکئی کیمپ پر حملے میں فورسز کے 7 جوان شہید ہوئے ، کالعدم ٹی ٹی پی نے نورستان کو 2016 میں خیسورا کا کمانڈر بنایا ۔


ای پیپر