DGMO Contact, ceasefire, observance, positive step, Shah Mahmood Qureshi, India, Pakistan
26 فروری 2021 (12:38) 2021-02-26

اسلام آباد: وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ ڈی جی ایم او کا رابطہ اور سیز فائر پاسداری پر آمادگی مثبت قدم ہے۔ سیز فائر کی پابندی سے کنٹرول لائن کے قریب بسنے والوں کو تحفظ ملے گا۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شاہ محمود قریشی نے کہا کہ معاملات میں بگاڑ بھارت کی جانب سے پیدا کیا جاتا رہا۔ بھارتی فورسز کی جانب سے سیز فائر کی خلاف ورزیاں کی جاتی رہیں لیکن 2008 کے بعد ان میں اضافہ ہوا ، انہوں نے کہا کہ سیزفائر کی خلاف ورزی سے معصوم کشمیری متاثر ہوئے۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ باہمی معاہدوں پر عملدرآمد پر اتفاق خوش آئندہ ہے ۔ بھارت پاکستان کو بلیک لسٹ میں شامل کرانے میں ناکام رہا ، دہشت گردی کیخلاف جنگ میں پاکستان نے بھاری قیمت چکائی ہے ، بھارت ایف اے ٹی ایف کو سیاسی مقاصد کیلئے استعمال کرتا ہے لیکن 13 ممالک نے پاکستان کے اقدامات کو سراہا۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ پاکستان ٹیرر فنانسنگ اور منی لانڈرنگ کے خلاف سنجیدہ ہے۔ حکومت نے قانون سازی سمیت بھرپور کاوشیں کیں ، ایف اے ٹی ایف 27 میں سے 24 پوائنٹس پر عملدرآمد کا معترف ہے۔ باقی 3 پوائنٹس پر جون تک بھی عملدرآمد کر لیں گے ، پاکستان نے یہ اقدامات اپنے قومی مقاصد میں کیے ہیں۔


ای پیپر