جب بھارتی حملے کے بعد صبح تین بجے ائیر چیف کا فون آیا ،عمران خان نے بھارتی حملے کی اندرونی کہا نی بتا دی
26 فروری 2020 (19:23) 2020-02-26

اسلام آباد:وزیر اعظم عمران خان نے بھارتی جا رحیت کا منہ توڑ جواب دینے کے ایک سال مکمل ہونے پر تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں اپنی افواج پر فخر ہے ،کہ انہوں نے دشمن کو ہر محاز پر شکست اور منہ توڑ جواب دیا ۔

وزیر اعظم نے 27فروری واقعہ کی ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مجھے پاکستانی قوم پر فخر ہے جس نے بھارتی حملے کے بعد انتہائی دلیرانہ انداز سے جواب دیا ،ان کا کہنا تھا کہ پلوامہ حملے کے بعد ہمارے پاس انٹیلی جنس رپورٹس تھیں کہ بھارت کچھ کر سکتا ہے ،وہاں تیاریاں چل رہی ہیں۔وزیراعظم نے کہا کہ بھارتی حملے کے بعد صبح تین بجے ائیر چیف نے مجھے ٹیلی فون کر کے اس حوالے سے بتا یا ، بھارتی حملے کے بعد نہ صرف ائیر فورس بلکہ ایل او سی پر تعینات فوجی جوانوں،قوم اور نیشنل لیڈر شپ کا رد عمل بہت مناسب تھا۔

وزیر اعظم عمران خان نے کہا بھارتی حملے کے بعد ہماری فورسز نے زبردست رسپانس دیا ،ہماری نیوی نے بھی بھارتی آبدوز کو لاک کیا ،ہم اس پر حملہ کر سکتے تھے لیکن ہم نے نہیں کیا ،انہوں نے کہا ہمیں اپنی فوج اور نیوی ، ائیر فورس پرفخر ہے ،مجھے اپنی آرمڈ فورسز پر اس لیے اعتماد تھا کیو نکہ ہم دہشت گردی کے خلاف مشکل ترین جنگ جیت چکے ہیں جو کہ زیادہ مشکل جنگ ہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ اس وقت بھارت بڑی مشکل میں پھنس چکا ہے کیونکہ بھارت نے خطرناک راستہ اختیار کرلیا ہے جہاں سے واپسی آسان نہیں ہے۔بھارت ابھی مسلمانوں کے خلاف کارروائی کر رہا ہے پھر کرسچن کمیونٹی ،سکھوں ،دلت اور بھارتی قبائلی کمیونٹی کے خلاف کارروائی کرے گا ،اس طرح پچاس ساٹھ کروڑ لوگوں کے خلاف کارروائیاں خطرناک بات ہے۔ان کا کہنا تھا کہ دنیا کی تاریخ گواہ ہے کہ نفرتوں کی بنیاد پر اس طرح کی کارروائیوں سے ملک تباہ ہو جاتے ہیں۔


ای پیپر