پاک فوج نے بھار تی سورماﺅں کا پول کھول دیا ,جوابی وار کا اعلان
26 فروری 2019 (18:25) 2019-02-26

اسلام آباد :ڈی جی آئی ایس پی آر نے بھارتی سورماﺅں کا پول کھولتے ہوئے کہا کہ اگربھارتی طیاروں نے کوئی انفراسٹرکچر تباہ ہو تا تو وہاں ملبہ ہوتا ،کوئی ایک اینٹ بھی نہیں ٹوٹی ،جھوٹ کے کوئی پاﺅں نہیں ہوتے ،بھارت کو پہلے بھی کہا تھا کہ وہ ہمیں کوئی سرپرائز نہیں دے سکتا ،لیکن اب بھارت ہمارے سرپرائز کا انتظار کرے ۔

میجر جنرل آصف غفور نے کہا کہ وزیر اعظم نے پہلے بھی کہا تھا کہ اگر کوئی کاروائی ہوئی تو ہم جوابی کاروائی کا سوچیں گے نہیں ،ردعمل دینگے ،بھارت نے دعویٰ کیا کہ ہم نے 360دہشتگرد مارے لیکن وہاں 10لوگوں کی لاشیں بھی نہ دکھا سکے ،آئی ایس پی آر کے مطابق گزشتہ رات بھی ہماری پٹرولنگ ٹیم معمول کی پرواز پر تھی ،جبا کے مقام پر بھارتی طیارے کے چار بم گرے ،بھارت کا مقصد ایسی جگہ پر حملہ کرنا تھا جہاں وہ دعویٰ کر سکتے ، پاک فضائیہ حالات کی کشیدگی کے پیش نظر پٹرولنگ پر پہلے سے ہی تھی ۔

پاک فوج نے بھارتی فورسز کو چیلنج کرتے ہوئے کہا کہ وہ پاکستان آئے اور حدود میں 21منٹ رہ کر دکھائے ،انہوں نے کہا اگر بھارت چاہتا تو پاکستانی فوجی تنصیبات پر حملہ بغیر ایل او سی کرا س کیے کر سکتا تھا ،انہوں نے کہا بھارت کو جواب دینے کیلئے تمام آپشن کھلے ہیں ، پاک فوج نے دوٹوک اعلان کرتے ہوئے کہا کہ اب ہم صرف یہ کہیں گے کہ سرپرائز کیلئے تیار رہیں ہمارا ردعمل مختلف ہو گا ،اب بس انتظار کریں۔

آصف غور نے کہا کہ اس سے قبل بھی بھارت کے پول کھول چکے ہیں اور اب بھی بھارت کا ڈرامہ بے نقاب کرینگے ،پوری پاکستانی قوم اور سیاسی قیادت ایک پیج پر ہے ،انہوں نے کہا بھارتی فوج کا ہدف ایک دفعہ پھر شہری آبادی تھا جس میں وہ کامیاب نہ ہو سکے ،بروقت رسپانس پر بھارتی طیارے واپس چلے گئے ۔

بھارتی دراندازی کے حوالے سے بلائی گئی ہنگامی پریس کانفرنس کے دوران ایک صحافی نے سوال پوچھا کہ پاکستان کی حدود میں داخل ہونے والے بھارتی جہاز کیوں نہیں گرائے؟ اس سوال کے جواب میں ڈی جی آئی ایس پی آر نے کہا کہ اگر بھارتی طیارے تھوڑی دیر اور پاکستان کی حدود میں رہتے تو پھر جواب مختلف طریقے کا ہوتا۔ پہلی سٹرائیک پر آپ کا فوری جواب جاتا ہے ، جب ڈاگ فائٹ ہوتی ہے تو آپ کا جواب مختلف ہوتا ہے اور جب جنگ ہوتی ہے تو پوری ایئر فورس فضا میں ہوتی ہے۔


ای پیپر