فوٹو بشکریہ ٹوئٹر

علی رضا عابدی کے قتل کی پوسٹ مارٹم رپورٹ منظر عام پر آگئی
26 دسمبر 2018 (09:37) 2018-12-26

کراچی: شہر قائد میں بدامنی کی لہر، ایم کیو ایم کے سابق رکن قومی اسمبلی علی رضا عابدی گھر کے باہر فائرنگ سے جاں بحق ہوگئے۔

ایم کیو ایم کے سابق رہنما کو موٹر سائیکل سوار دہشتگردوں نے گھر کے باہر گولیاں ماریں۔ علی رضا عابدی کو زخمی حالت میں ہسپتال لایا گیا، لیکن وہ جانبر نہ ہوسکے۔ ابتدائی رپورٹ کے مطابق انہیں سات گولیاں ماری گئیں، دو گردن، ایک بازو اور چار گولیاں سینے میں لگیں۔ واقعے کی سی سی ٹی وی نیو نیوز نے حاصل کرلی۔

پوسٹ مارٹم کے بعد میت امام بارگاہ یثرب منتقل کردی گئی۔ مقتول علی رضا عابدی کی نماز جنازہ آج نماز ظہر کے بعد ادا کی جائے گی۔

انچارج سی ٹی ڈی راجا عمر خطاب کا کہنا ہے کہ حملہ کرنے والے انتہائی ماہر نشانہ باز تھے۔ دہشتگردوں نے ڈرائیونگ سائیڈ سے 10 سیکنڈ میں حملہ مکمل کیا۔

وزیر اعظم عمران خان نے علی رضا عابدی پر قاتلانہ حملے کی شدید مذمت کرتے ہوئے واقعے کی رپورٹ طلب کرلی۔ انہوں نے سابق رکن قومی اسمبلی کے قتل پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا۔

وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے آئی جی سندھ ڈاکٹر سید کلیم امام سے رپورٹ طلب کی ہے۔

واضح رہے کہ شہر قائد میں ٹارگٹ کلنگ کا اس ہفتے یہ دوسرا واقعہ ہے۔ تین روز قبل بھی شہر ِ قائد کے علاقے ناظم آباد میں پاک سرزمین پارٹی کے ٹاؤن آفس پر نا معلوم افراد نے فائرنگ کر کے 2 کارکنوں کو قتل اور 2 کو زخمی کر دیا تھا۔


ای پیپر