پنجاب ترقی کی راہ پر
26 اگست 2018 2018-08-26

پنجاب حکومت آج کل تشکیل کے مراحل سے گزر رہی ہے۔ایک دو روز میں پنجاب کابینہ حلف اٹھا لے گی۔ نو منتخب وزیراعلیٰ پنجاب نے واضح طورپر اعلان کیا ہے کہ وزیر اعظم عمران خان کے ویژن کے مطابق صوبہ میں تعلیم و صحت کی ترقی اور عام شہریوں کے لیے ان شعبوں میں بہترین مواقع کی فراہمی کو یقینی بنانے کے لیے ٹھوس اقدامات کئے جائیں گے جس کے تحت جلد صحت و تعلیم کے عالمی ماہرین سے ملاقاتوں کا سلسلہ شروع کیا جائے گا۔ صوبے میں جاری پراجیکٹ کے حوالے سے اصولی طور پر فیصلہ کیا گیا ہے کہ پچھلی حکومت کا کوئی بھی پراجیکٹ بلاوجہ منسوخ نہیں کیا جائے گا۔ صرف بجٹ کنٹرول کرنے کے لئے ان پراجیکٹس میں تبدیلی لائے جانے کا امکان ہے۔

وزیراعلیٰ عثمان بزدارکا کہنا ہے کہ تبدیلی لوگوں کے بہتر مستقبل کیلئے آئی ہے اور اس حقیقی تبدیلی کو برقرار رکھنے اور اس کے ثمرات عوام تک پہنچانے کیلئے شب و روز محنت کرنا ہو گی۔ عمران خان اور ان کی ٹیم عوام کی توقعات پر پورا اترے گی۔انہوں نے وعدہ کیا کہ قوم کی عمران خان سے وابستہ توقعات کو پوری کرنے کیلئے دن رات ایک کر دیں گے۔ عمران خان کی قیادت میں نئے پاکستان کی منزل کے حصول کا سفر شروع ہو چکا ہے۔ جنوبی پنجاب کے عوام کو ان کے حقوق ملیں گے۔ بدامنی کے شکار پنجاب میں جرائم کی بیخ کنی کیلئے ٹھوس اقدامات کئے جائیں گے اور عوام کے جان و مال کے تحفظ کیلئے تمام تروسائل بروئے کار لائے جائیں گے۔

پولیس نظام میں اصلاحات کا ذکر کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ نے واضح کیا کہ پولیس نظام میں وہی تبدیلی لائیں گے جو تحریک انصاف خیبر پی کے میں لائی ہے اور پنجاب پولیس میں کے پی کے پولیس کی طرز پر اصلاحات لائیں اور نئے پاکستان میں پولیس عوام کی خادم بنے گی۔ پولیس کے روئیے میں تبدیلی ہر قیمت پر لائیں گے۔ جرائم کے خاتمے کیلئے مربوط حکمت عملی اپنائی جائے گی۔ صوبہ بھر میں سٹریٹ کرائمز میں ملوث افراد کے خلاف سخت قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔

وزیراعظم عمران خان کا وژن عام آدمی کی ترقی و خوشحالی ہے اور ہم سب نے عمران خان کے مشن کو پورا کرنے کیلئے ٹیم کے طور پر کام کرنا ہے۔ کوئی لمحہ ضائع کئے بغیر ملک کی ترقی و خوشحالی کے لئے آگے بڑھنا ہے۔ پسماندہ علاقوں کی ترقی اورصوبے کے کونے کونے میں بنیادی سہولتوں کی فراہمی اولین ترجیح ہے۔ تبدیلی کا عمل شروع ہو چکا ہے۔ وزیراعظم عمران خان کے100 دن کے پلان پر تیزی سے عملدرآمد کیا جائے گا اور تبدیلی کے سفر میں پنجاب ہراول دستے کا کردار ادا کرے گا۔سارے ملک کے ساتھ ساتھ پنجاب میں بھی کفایت شعاری اور سادگی کو فروغ دیا جا رہا ہے۔ ہمارے عملی اقدامات سے عوام کو تبدیلی کا احساس ہوگا۔

وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدارکا کہنا ہے کہ پنجاب میں کرپشن کسی صورت برداشت نہیں ہو گی، نہ ہم کرپشن کریں گے نہ کسی اور کو کرنے دیں گے۔انہوں نے واضح طور پر کہا کہ حکومتی کے امور چلانے میں سادگی اور کفایت شعاری سے کام لیں گے اور سوال ہی پیدا نہیں ہوتا کہ اپنے لئے بڑا پروٹوکول لوں کیونکہ ہماری پہلی ترجیح کرپشن کے ناسور کا خاتمہ کرنا ہے۔میرے لئے صرف ایک وزیراعلیٰ ہاؤس ہوگا اور اپنے سیکرٹریٹ کے دفتر میں بیٹھوں گا۔ کابینہ کی تشکیل پر بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کابینہ میں ایسے افراد شامل کریں گے جن کو محکموں کے امور چلانے کا تجربہ ہو جبکہ کرپٹ افسران کا احتساب ہوگا اور محنتی افسران کو اوپر لے کر آئیں گے۔

گزشتہ دور حکومت پر بے پناہ اعتراضات، الزامات عائد ہوئے۔ احد چیمہ جیسے شہباز شریف کے لاڈلے گرفتار بھی ہوئے اور نیب میں ان سے پوچھ گچھ بھی جاری ہے۔ اس حوالے سے عثمان بزدار کا یہ کہنا بجا اور بر محل ہے کہ پچھلے دور حکومت کے پانچ وزیر اعلیٰ ہاؤسز کی انکوائری کروں گا اس حوالے سے سیکرٹری سے تفصیلات طلب کی ہیں۔ بیوروکریسی میں اچھے لوگوں کی حو صلہ افزائی کرینگے اور کام نہ کرنے والوں کیخلاف ایکشن لیا جائے گا۔ محکمہ اینٹی کرپشن کو ٹھیک کرنا ہے اور جلد اس حوالے سے کام شروع ہو جائے گا اوراگر یہ ادارہ ٹھیک ہوگیا تو سارے معاملات ٹھیک ہوجائیں گے۔اسی حوالے سے لاہور کے سانحہ ماڈل ٹاؤن کا ذکر کرتے ہوئے سردار عثمان بزدار نے کہا کہ سانحہ ماڈل ٹاؤن کی تفصیلات کو بھی دیکھیں گے کہ کیا کرنا ہے۔

پنجاب ایک زرعی صوبہ ہے۔ صوبے کی معیشت کا دارومدار اچھی زراعت پر ہے۔ پنجاب نہ صرف اپنے لئے بلکہ پورے پاکستان کیلئے پھل سبزیاں و دیگر اجناس پیدا کرتا ہے۔ زرعی معاملات کو دیکھنے کیلئے ماہرین کی خدمات حاصل کرنے کا بیان وزیر اعلیٰ کا احسن اقدام ہے۔

پنجاب میں امن و امان کی ابتر صورتحال کو بہتر بنانے کیلئے تھانہ کلچر کو تبدیل کرکے خیبر پختوانخواہ کا ماڈل رائج کرنے کا عزم ظاہر کرتے ہوئے عثمان بزدار نے کہا کہ ہمارا طرز حکومت دوسری حکومتوں سے مختلف ہوگا ۔ پولیس نظام بہتر بنانے کیلئے پورا سپورٹ کروں گا۔ غیر قانونی احکامات میں بھی دوں تو عمل نہیں کیا جائے۔ صوبے میں قانون کی حکمرانی کو ہر سطح پر یقینی بنایا جائے گااورمیں قانون کے خلاف کوئی بات برداشت نہیں کروں گا۔میں خود ہرضلعی اورڈویژنل ہیڈ کوارٹر ز کا دورہ کروں گااورمحکموں میں جا کر بریفنگز لوں گا۔

وزیراعلی پنجاب عثمان بزدار سادگی کی نئی مثال قائم کرتے ہوئے خود گاڑی چلا کر بغیر پروٹوکول نماز عید کی ادائیگی کیلئے جیلانی پارک پہنچے اور پچھلی صفوں میں عید کی نماز پڑھی۔ نہ کوئی پروٹوکول نہ سکیورٹی پر مامور اہلکاروں کی فوج ظفر موج۔سادگی کی انتہا یہ کہ نماز عید کے بعد عید گاہ میں موجود شہریوں کے ساتھ سلیفیاں بھی بنوائیں۔نماز عید کے بعد وزیر اعلیٰ دارالشفقت میں یتیم بچوں سے عید ملنے گئے۔ اس کے علاوہ وزیراعلیٰ پنجاب سردارعثمان بزدار نے پنجاب انسٹی ٹیوٹ آف مینٹل ہیلتھ کا دورہ بھی کیا ہے۔

وزیراعلیٰ پنجاب نے حلف اٹھاتے ہی واضح کیا تھا کہ وہ صوبے کواپنے قائد وزیر اعظم پاکستان عمران خان کے وژن کے مطابق چلائیں گے اور غیر ضروری اخراجات کو ختم کر دینگے۔اسمبلی میں انہوں نے اس عزم کا بھی اظہار کیا کہ وہ اپوزیشن کوبھی ساتھ لیکر چلیں گے تاکہ صوبے کی ترقی و خوشحالی کی راہ میں کوئی رکاوٹ نہ آئے۔ اْمید ہے اب اپوزیشن بھی صوبہ پنجاب اور یہاں کے عوام کی بہتری کے عمل میں حکومت کے مثبت کاموں میں تعاون کریگی جس سے اْمید ہے پنجاب میں ترقی اور خوشحالی کا سفر مزید تیز ہو گا۔ امید ہے کہ وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار اپنے ارادوں پر پورا اتریں گے۔ گو کہ سیاست میں وہ نسبتاً نووارد ہیں اور ان کا مقابلہ گھاگ سیاستدانوں سے ہے مگر جب لگن سچی ہو اور ارادے قوی ہوں تو بڑے سے بڑا کام بھی آسان ہو جاتا ہے اور اپنی منزل تک پہنچا جا سکتا ہے۔


ای پیپر