امریکی سپریم کورٹ میں مسلمانوں پر پابندی کے مقدمے کی سماعت
26 اپریل 2018 (20:09)

واشنگٹن :امریکا کی سپریم کورٹ نے مسلمانوں پر پابندی کے مقدمے کی سماعت شروع کردی، بعض مسلمان ممالک کے شہریوں پر امریکا کا سفر کرنے پر پابندی کے احکامات کی قانونی حیثیت کا تعین کیاجائیگا،جون کے آخر میں فیصلہ سنائے جانے کا امکان ہے ۔


تفصیلات کے مطابق امریکی سپریم کورٹ میں مسلمانوں کی واشنگٹن میں داخلے پر پابندی کے کیس کی سماعت ہوئی۔ مقدمے میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے بعض مسلمان اکثریتی ممالک کے شہریوں پر امریکا کا سفر کرنے پر پابندی کے احکامات کی قانونی حیثیت کا تعین کیاجائیگا۔ مختلف ریاستی عدالتوں کی جانب سے حکم امتناعی کے خلاف ٹرمپ انتظامیہ نے سپریم کورٹ میں نظرثانی کی اپیلیں دائر کر رکھی ہیں۔


صدر ٹرمپ نے گذشتہ برس منصب صدارت سنبھالنے کے فوری بعد یہ حکم جاری کیا تھا۔ اس کے خلاف ہوائی کی عدالت نے سب سے پہلے اسٹے آرڈر جاری کیا تھا۔ سپریم کورٹ کی جانب سے جون کے آخر میں فیصلہ سنائے جانے کا امکان ہے۔ سفری پابندیوں کو عبوری طور پر جاری رکھنے کی اجازت ٹرمپ انتظامیہ کو سپریم کورٹ پہلے ہی دے چکی ہے۔


ای پیپر