Source : Yahoo

نیشنل کاﺅنٹر ٹیرازم اتھارٹی کا اہم اجلاس ،وزیر اعظم عمران خان کا بڑا فیصلہ سامنے آگیا
25 ستمبر 2018 (20:31) 2018-09-25

اسلام آباد : وزیر اعظم عمران خان کی زیرصدارت نیشنل کاﺅنٹر ٹیررازم اتھارٹی (نیکٹا)کے پہلے اجلاس میں ادارے کی کارکردگی اور کردار کا جائزہ لینے کے لیے کمیٹی قائم کرنے کا فیصلہ کرلیا گیا۔ نیشنل ایکشن پلان کے 20 نکاتی ایجنڈے پر عمل درآمد کا تفصیلی جائزہ لیاگیا جبکہ وزیر اعظم عمران خان نے کہاہے کہ سابق حکومت کی غفلت کے نتیجے میں نیکٹا اپنی کارکردگی بہتر بنانے پر توجہ نہیں دے سکا۔

منگل کو وزیراعظم ہاﺅس میں عمران خان کی زیر صدارت نیکٹا کے بورڈ آف گورنرز کا پہلا اجلاس منعقد ہوا۔اجلاس میں چاروں صوبوں کے وزرا اعلی، گلگت بلتستان اور آزاد کشمیر کے حکام، وفاقی وزرا، ڈائریکٹر جنرل (ڈی جی) انٹرسروسز انٹیلی جنس(آئی ایس آئی)، پولیس حکام سمیت دیگر اعلی عہدیداروں نے شرکت کی۔اجلاس کے دوران نیکٹا کے نیشنل کوآرڈینیٹر نے ادارے کے قیام کے بعد سے دہشت گردی اور انتہا پسندی کے خاتمے کے حوالے سے بنائی گئی پالیسی اور ان پر عملدرآمد سے متعلق بریفنگ دی، اس دوران نیشنل ایکشن پلان کے 20 نکاتی ایجنڈے پر عمل درآمد کا تفصیلی جائزہ بھی لیا گیا۔

وزیر اعظم عمران خان کی زیرصدارت نیشنل کاﺅنٹر ٹیررازم اتھارٹی (نیکٹا)کے پہلے اجلاس میں ادارے کی کارکردگی اور کردار کا جائزہ لینے کے لیے کمیٹی بنانے کا فیصلہ کیاگیا۔ اس موقع پر وزیر اعظم عمران خان نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان نے دہشت گردی اور انتہا پسندی کے خاتمے کے لیے طویل جنگ لڑی ہے اور اس دوران عام شہریوں اور سیکیورٹی فورسز کے اہلکاروں نے ہزاروں جانوں کا نذرانہ پیش کیا ہے۔

وزیر اعظم نے کہا کہ ملک میں آج بہتر سیکیورٹی صورتحال میں تمام اسٹیک ہولڈرز کی مشترکہ جدوجہد ہے جبکہ مسلح افواج، انٹیلی جنس ایجنسیوں، پولیس اور دیگر قانون نافذ کرنے والے اداروں کی بھی بڑی قربانیاں شامل ہیں ۔وزیراعظم نے مسلح افواج ، خفیہ اداروں ، پولیس ، قانون نافذ کرنے والے اور سکیورٹی اداروں کی خدمات اور کردار کو سراہتے ہوئے کہا کہ آج سلامتی کی بہتر صورتحال تمام متعلقہ فریقوں کی مشترکہ کوششوں کا نتیجہ ہے۔

عمران خان نے نیکٹاکے قیام سے اب تک ادارے کے بورڈ آف گورنرزکا ایک بھی اجلاس نہ بلانے پر تشویش اور افسوس ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ گزشتہ حکومت کی اس غفلت سے ایک اہم ادارے کی کارکردگی میں بہتری لانے پر توجہ مرکوز نہیں کی جاسکی۔ موجودہ زمینی حقائق اس بات کی طرف اشارہ کرتے ہیں کہ اس ادارے کو فعال کرنے کے ساتھ جدت سے ہم آہنگ ہونا چاہیے۔اسی ضمن میں نیکٹا کے کردار اور کارکردگی کا جائزہ لینے کے لیے ایک کمیٹی قائم کرنے کا فیصلہ کیا گیا، یہ کمیٹی ایک ہفتے میں اپنی سفارشات وزیر اعظم عمران خان کو پیش کرے گی۔


ای پیپر