sugar crisis,ghee,utility stores,sale,stopped
25 نومبر 2020 (20:26) 2020-11-25

لاہور :چینی کا بحران ابھی ختم ہی ہوا تھا کہ یوٹیلٹی سٹورز پر گھی کا سٹاک محدود ہو گیا ٗ عوام کو دو کلو سے زائد گھی کی فروخت بند کر دی گئی۔

ایک طرف حکومت کا دعویٰ ہے کہ پاکستان کی معیشت اپنے قدموں پر کھڑی ہو رہی ہے اور عوام کیلئے بڑی خوشخبریاں ہیں لیکن دوسری طرف حقیقت یہ ہے کہ عوام کیلئے زندگی گزارنا ہر دن مشکل ہوتا جا رہا ہے۔ تازہ ترین اطلاعات کے مطابق یوٹیلٹی سٹور پر پابندی لگا دی گئی ہے کہ کوئی بھی شہری 2 کلو سے زائد گھی نہیں خرید سکے گا۔ 

یوٹیلٹی سٹورز پر اس سے قبل چینی کا بحران تھا اور عوام کو مسلسل چینی کی خریداری میں مشکلات پیش آرہی تھیں ۔ لیکن اب چینی کے بحران سے نمٹنے کے بعد عوام کیلئے نیا بحران گھی کی خریداری میں پیش  آگیا جب یوٹیلٹی سٹور نے عوام کو 2 کلو سے زائد گھی فروخت کرنے سے انکار کر دیا ہے۔ چینی کے خریدار مطمئن ہوئے تو اب گھی کی دستیابی کے حوالے سے عوام کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ 

یوٹیلٹی سٹورز کا اس حوالے سے کہنا ہے کہ گھی کا سٹاک محدود ہونے کی وجہ سے عوام کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے اور ہماری کوشش ہے کہ کم تعداد میں گھی تمام خریداروں کو فروخت کیا جا سکے۔


ای پیپر