pm imran khan,global epidemic,smart lockdown,jobs
25 نومبر 2020 (18:41) 2020-11-25

  لاہور:وزیر اعظم عمران خان نے پاکستان میں عالمی وبا کی تازہ صورتحال کے بارے میں ایک بار پھر اپنے موقف کا اعادہ کرتے ہوئے اعلان کیا ہے کہ فیکٹریاں اور روزگار بند نہیں ہو گا اور نہ ہی مکمل لاک ڈائون کریں گے۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ عالمی وبا سے اس وقت پاکستان میں یومیہ 50 افراد جاں بحق ہو رہے ہیں ٗ اگر ہم نے بحیثیت قوم مل کر اس صورتحال کا مقابلہ نہ کیا تو ہمارے معاشی حالات خراب بھی ہو سکتے ہیں۔ عوام کیلئے ضروری ہے کہ وہ ایس او پیز پر عملدرآمد کو یقینی بنائیں ٗ سب سے آسان ماسک پہننا ہوتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ مشکل حالات سے ہم بہتر انداز میں نکلے ہیں ۔ دنیا میں اس طرح سے کسی ملک سے عالمی وبا کا سامنا نہیں کیا اور ہمسائیہ ملک بھارت اس سے سب سے زیادہ متاثر ہوا ہے۔ اب مجھے خطرہ ہے کہ ہم نے بحیثیت قوم مل کر اس عالمی وبا کا مقابلہ نہ کیا تو حالات بگڑ بھی سکتے ہیں۔ عالمی وبا کے پہلے مرحلے میں اگر ہم نے اس وبا کو شکست دی تھی تو وہ عوام کے تعاون سے ممکن ہوا تھا۔ ہم وہ واحد ملک تھے جس نے رمضان میں مساجد کو بند نہیں کیا  اور مساجد نے ایس او پیز پر ہر طرح سے عمل کیا تھا۔

وزیر اعظم نے اس موقع پر علمائے کرائم سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ سب سے کہتا ہوںکہ ایس او پیز پر عمل کریں۔ اگر اس مرتبہ پھر اللہ تعالیٰ نے کرم کیا تو سب مل کر ذمہ دار کا مظاہرہ کریں ۔عالمی وبا کے موقع پر ہم فیکٹریاں اور کاروبار بند نہیں کریں گے۔ 


ای پیپر