Government, opposition, lives, citizens, Shibli Faraz
25 نومبر 2020 (15:17) 2020-11-25

اسلام آباد: وفاقی وزیر اطلاعات شبلی فراز نے کہا ہے کہ پی ڈی ایم کا قومی نہیں ذاتی ایجنڈا ہے، اپوزیشن کو شہریوں کی جانیں خطرے میں ڈالنے کی اجازت نہیں دیں گے۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شبلی فراز نے کہا کہ عالمی وبا کے معاملے پر اسپیکر قومی اسمبلی نے پارلیمانی کمیٹی تشکیل دی لیکن بدقسمتی سے آج کے اجلاس میں اپوزیشن رہنما شریک نہیں ہوئے۔ اپوزیشن نے ایک بار پھر غیر ذمہ داری کا مظاہرہ کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ اپوزیشن نے اجلاس کا بائیکاٹ کرکے ایک غلط فیصلہ کیا ہے۔ عوام کا تحفظ اپوزیشن کی ترجیح نہیں، عوام کے تحفظ کے لیے حکومت تمام اقدامات کرے گی۔

شبلی فراز نے کہا کہ قومی مسئلے کو سیاست کی نذر کرنا قابل افسوس ہے۔ میٹنگ میں شرکت نہ کرکے اپوزیشن نے پارلیمنٹ پر عدم اعتماد کیا۔ انہوں نے کہا کہ پارلیمانی کمیٹی کا مقصد اتفاق رائے سے عالمی وبا کی صورتحال سے نمٹنا ہے۔ وبا سے متعلق پارلیمانی کمیٹی میں تمام جماعتیں شامل ہیں۔

وفاقی وزیر اطلاعات نے کہا کہ عالمی وبا کی پہلی لہر میں پاکستان نے کامیاب حکمت عملی اپنائی ، وزیر اعظم کی پالیسی تھی روزگار اور جانوں کو بچانا ہے۔ لیکن دوسری لہر کے اعداو شمار صورتحال کی سنگینی کا بتا رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کا مقصد معاشی سرگرمیوں کے ساتھ عالمی وبا کے پھیلاو کو بھی روکنا ہے۔

ادھر کراچی کی تاجر تنظیموں نے حکومت کی جانب سے طے کردہ اوقات کار کو مسترد کر دیا، انہوں نے حکومت کو اوقت کار تبدیل کرکے 10 سے رات 8 بجے تک کرنے کیلئے 72 گھنٹوں کا الٹی میٹم دیدیا۔

تاجروں کا کہنا تھا کہ حکومت کاروبار کے بجائے سیاسی جلسوں کو بند کرائے کیونکہ علمی وبا سیاسی سرگرمیوں سے پھیل رہی ہے۔

تاجر تنظیموں نے مطالبات منظور نہ ہونے کی صورت میں آئندہ سخت لائحہ عمل اختیار کرنے کی دھمکی بھی دی۔


ای پیپر