معید یوسف نے بھارت میں بطور نئے ہائی کمشنر تعیناتی کی خبروں کی تردید کر دی
سورس:   فائل فوٹو
25 مارچ 2021 (22:17) 2021-03-25

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان کے معاون خصوصی برائے قومی سلامتی ڈاکٹر معید یوسف نے ان میڈیا رپورٹس کی تردید کر دی ہے جن میں کہا گیا تھا کہ حکومت کی جانب سے انہیں بھارت میں پاکستان کا نیا ہائی کمشنر تعینات کرنے پر غور کیا جا رہا ہے۔ 

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے قومی سلامتی ڈاکٹر معید یوسف نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر نجی روزنامہ کے نیوز لنک کو ٹوئٹ کرتے ہوئے کہا کہ یہ افواہ مکمل طور پر بناوٹی اور بے بنیاد ہے جس کا حقیقت سے کوئی تعلق نہیں ہے۔ 

انہوں نے کہا کہ مجھے یہ بھی معلوم ہے کہ ان دنوں میں کسی خبر کی اشاعت سے پہلے اس کی حقیقت جانچنے کا مطالبہ کرنا کافی زیادہ ہے لیکن ایسا بھی نہیں ہونا چاہیے کہ خبر کی کوئی منطق ہی نہ ہو۔ 

اس حوالے سے وفاقی حکومت نے وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے قومی سلامتی و سٹریٹجک پالیسی پلاننگ معید یوسف کی بھارت میں نئے ہائی کمشنر کے طور پر تعیناتی زیر غور ہونے بارے میڈیا رپورٹوں کی تردید کر دی۔ قومی سلامتی ڈوثرن کی جانب سے اس بارے میں جاری وضاحتی بیان میں کہا گیا کہ معید یوسف کی بھارت میں نئے ہائی کمشنر کے طور پر تعیناتی زیر غور ہونے بارے رپورٹیں بے بنیاد ہیں اور ان میں کوئی صداقت نہیں۔

خیال رہے کہ گزشتہ ماہ بھارتی میڈیا نے دعویٰ کیا تھا کہ وزیراعظم عمران خان کے معاون خصوصی برائے قومی سلامتی معید یوسف اور بھارتی نیشنل سیکیورٹی ایڈوائزر اجیت ڈوول کے درمیان بیک ڈور رابطے ہوئے ہیں تاہم اس وقت بھی ڈاکٹر معید یوسف کی جانب سے کہا گیا تھا کہ یہ بات پاک بھارت سیز فائر معاہدے کے تناظر میں کی گئی ہے اور بھارتی میڈیا پاک بھارت ڈی جی ایم اوز کے اعلان کو بیک چینل ڈپلومیسی بتا رہا ہے لیکن بھارتی میڈیا کا میری اور بھارتی نیشنل سیکیورٹی ایڈوائزر (این ایس اے) کی بیک چینل ڈپلومیسی کا دعویٰ بے بنیاد ہے۔

واضح رہے کہ معید یوسف کو دسمبر 2019 میں وزیراعظم کا معاون خصوصی برائے قومی سلامتی مقرر کیا گیا تھا ۔اس سے پہلے واشنگٹن ڈی سی میں امریکی انسٹی ٹیوٹ آف پیس کے ایشیا سینٹر کے ایسوسی ایٹ نائب صدر تھے۔

بشکریہ(نیو نیوز)


ای پیپر