US Biden,us secretary of state,Antony J. Blinken,Secretary of State
25 مارچ 2021 (19:59) 2021-03-25

واشنگٹن:امریکی وزیر خارجہ نے خطے کی بدلتی صورتحال پر تبادلہ خیال کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ نے کبھی کسی ملک پر دبائو نہیں ڈالاکہ وہ امریکہ یا چین میں سے کسی ایک کا انتخاب کرے ۔

تفصیلات کے مطابق امریکی وزیر خارجہ اینٹونی بلنکن نے نیٹو ہیڈ کوارٹر میں خطاب کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ نے کبھی بھی کسی ملک کو ’’ہم یا وہ ‘‘کے فیصلے پر مجبور نہیں کیا ،انہوں نے کہا چین کے خطرناک عزائم مغربی ممالک کیلئے خطرہ بنے ہوئے ہیں لیکن امریکہ کسی کو واشنگٹن اور بیجنگ کے مابین فریقوں کا انتخاب کرنے پر مجبور نہیں کر ے گا ۔

اینٹونی بلنکن کا مزید کہنا تھا چین ،امریکہ اور اس کے اتحادیوں کے بین الاقوامی نظام کے اصولوں کو پامال کرنے کے لئے سرگرم ہے ،ہم چین کے امریکہ کیخلاف کسی بھی منصوبے کو کامیاب نہیں ہونے دینگے ،دوسری جانب چین کی طرف سے ایسے تمام امریکی الزامات کی تردید کی گئی اور کہا کہ وہ عالمی تجارتی تنظیم اور بین الاقوامی مالیاتی فنڈ جیسے بین الاقوامی اداروں کے قائم کردہ عالمی قوانین کا احترام کرتا ہے۔ہم امریکہ کے تمام بے بنیاد الزامات کی سختی سے مذمت کرتے ہیں ۔

واضح رہے چند روز قبل الاسکامیں بائیڈن انتظامیہ اور چین کے درمیان پہلی مرتبہ اعلیٰ سطحی مذاکرات ہوئے تھے اور اس میں چینی اور امریکی حکام کے درمیان سخت جملوں کا تبادلہ بھی  ہوا تھا،لاسکا میں ہونے والے ان مذاکرات میں چینی حکام نے امریکہ پر الزام عائد کیا تھاکہ وہ دیگر ممالک کوچین پر حملہ کرنے کے لیے اکسا رہا ہے جبکہ امریکہ نے کہا کہ چین دکھاوے کے لیے ذہن بنا کر آیا تھا،دونوں ممالک کے درمیان تعلقات کئی سالوں سے کشیدہ ترین سطح پر ہیں ۔


ای پیپر