حکومت کی طرف سے کل کوئی تماشا بنایا تو وہ خود ہی تماشا بن جائے گی، رانا ثنااللہ
سورس:   فائل فوٹو
25 مارچ 2021 (17:13) 2021-03-25

لاہور: پاکستان ڈیمو کریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) کے رہنماوں نے کہا کہ اگر مریم نواز کی پیشی کے موقع پر حکومت کی طرف سے کوئی تماشا بنایا تو وہ خود ہی تماشا بن جائے گی کیونکہ قانون قومی احتساب بیورو (نیب ) کی لونڈی نہیں ہے کہ جہاں مرضی ریڈ زون بنا دیں گے۔

تفصیلات کے مطابق مسلم لیگ (ن) کے مرکزی سیکرٹریٹ میں پاکستان ڈیمو کریٹک موومنٹ کے رہنماوں کا اہم اجلاس ہوا جس مریم نواز کی نیب میں کل ہونے والی پیشی کے متعلق گفتگو کی گئی۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ مسلم لیگ (ن) کی نیب صدر مریم نواز ماڈل ٹاون سے ریلی کی شکل میں پی ڈی ایم قائدین کے ساتھ نیب کی دفتر پہنچیں گی۔ 

اجلاس کے بعد مشترکہ پریس کانفرنس کے دوران لیگی رہنما رانا ثنااللہ نے کہا کہ ہم کل نیب کے دفتر پرامن طور پر اظہار یکجہتی کیلئے جائیں گے۔ حکومت کو مریم نواز کے ڈراؤنے خواب آ رہے ہیں اور خوف کے عالم میں حکومت کی رات بھاری ہے کیونکہ کل ان کی جان نکل جائے گی۔

اس موقع پر پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) وسطی پنجاب کے صدر قمر زمان کائرہ کا کہنا تھا کہ نیب جو کر رہا ہے اور احتساب نہیں ہے اور انتقامی عمل پر ہم سب متحد ہیں جبکہ ہم نیب پر حملہ آور ہونے نہیں بلکہ احتجاج ریکارڈ کروانے جار رہے ہیں۔ نیب کو کسی اور سے نہیں بلکہ اپنے آپ سے خطرہ ہے اور لانگ مارچ سمیت تمام 26 نکات پر ہمارا اتفاق ہے۔ 

ان کا مزید کہنا تھا کہ ہم نے اکٹھے ہو کر سینیٹ الیکشن میں حکومت کو شسکت دی اور پی ڈی ایم اکٹھی ہے جبکہ لانگ مارچ کے ساتھ ہیں اور استعفوں کے بغیر بھی لانگ مارچ ڈیلیکس طریقے سے ہو گا۔

جمعیت علما اسلام (ف) کے رہنما عبدالغفور حیدری کا کہنا تھا کہ ان حالات میں حکومت کے پیچھے کھڑا ہونا قومی جرم ہو گا اور صرف اپوزیشن کی پگڑیاں اچھالنے کے لیے احتساب کیا جا رہا ہے جسے ہم نہیں مانتے۔

اس سے قبل کورونا وائرس کے باعث قرنطینہ میں موجود وزیراعظم عمران خان نے اپنی رہائشگاہ پر حکومتی میڈیا ٹیم سے ملاقات کی جس میں وزیراعظم کو ملکی سیاسی صورتحال پر بریفنگ دی گئی۔ اس موقع پر مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر مریم نواز کی کل ہونے والی پیشی کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ مریم نواز کی پیشی کے موقع پر کسی کو بھی قانون ہاتھ میں لینے کی اجازت نہیں دیں گے۔

یاد رہے کہ قومی احتساب بیورو (نیب) نے مریم نواز کو 26 مارچ کو طلب کر رکھا ہے اور مریم نواز کی عدالت پیشی کے موقع پر کسی بھی قسم کی بدمزگی سے بچنے کے لیے حکومت نے سکیورٹی کے انتہائی سخت انتظامات کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

 بشکریہ(نیو نیوز)


ای پیپر