typhoid,campaign,five million,children,Punjab,difficulties
25 جنوری 2021 (14:31) 2021-01-25

 لاہور(میاں نوید سے)پنجاب میں پچاس لاکھ بچوں کے لیے ٹائیفائیڈ مہم شروع ہونے سے قبل ہی مشکلات کا شکار ہوگئی۔محکمہ پرائمری اینڈ سکینڈری نے محکمہ سپیشلائزڈ ہیلتھ نے ایک ہزار ایک سو85 تربیت یافتہ عملہ مانگ لیا۔

تفصیلات کے مطابق محکمہ سپیشلائزڈ ہیلتھ نے مراسلہ جاری کر دیا ہے۔ صوبہ بھر میں ٹائیفائیڈ مہم کی ویکسی نیشن کے لیے تربیت یافتہ عملے کی کمی ہے، پنجاب میں یکم فروری سے 15 فروری تک ٹائیفائیڈ مہم جاری رہے گی ٹائیفائیڈ مہم  میں ٹیکے لگانے کے لیے تربیت یافتہ عملے کی کمی ہے جس کی وجہ سے محکمہ پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ کیئر نے مہم سے قبل سپیشلائزڈ ہیلتھ کیئر سے تربیت یافتہ عملہ مانگ لیا۔

پنجاب کے 15 ہسپتالوں سے ٹائی فائیڈ ویکسی نیشن کے ٹیکے لگانے کے لیے 1185 نرسز مانگ لیں تاکہ 9 ماہ سے 15 سال تک کے 50 لاکھ بچوں کی ویکسنیشن کی جا سکے۔محکمہ پرائمری ہیلتھ  کے پاس 965 تربیت یافتہ عملے کی کمی ہے۔کمی کو پورا کرنے کے لیے محکمہ سپیشلائزڈ ہیلتھ نے وائس چانسلر ،پرنسپلز  اور ایم ایس کے نام مراسلہ جاری کردیا تاکہ تربیت عملہ کی کمی پوری کی جا سکے۔


ای پیپر