Shahid Khaqan Abbasi,pm imran khan,chairman nab,fir,police,accountable
25 فروری 2021 (12:12) 2021-02-25

کراچی : سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ پاکستان میں احتساب کا ادارہ قابل احتساب ہو چکا ہے ٗ تمام چیئر مین نیب کیخلاف پرچہ درج کر کے کارروائی کریں ۔ 

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے الیکشن چوری سے متعلق حقائق جاننے کی ضرورت ہے۔آج احتساب کا ادارہ خود قابل احتساب ہے۔ جب اپنی چوری ہوتی ہے تو کمیشن بنا دیتے ہیں۔کمیشن بن جاتے ہیں مگر رپورٹ کوئی نہیں آتی۔حمود الرحمن کمیشن سے لیکر یہ جو آخری گندم کا کمیشن بنا تھا اس کی رپورٹ بھی نہیں آئی اور اب براڈ شیٹ پر بھی کمیشن بن گیا ہے۔کمیشن بنتے ہی اس لئے ہیں کہ مجرموں کو تحفظ دیا  جائے اور چوری پر پردہ ڈالے جائیں لیکن اب وہ وقت آگیا ہے کہ ان کمیشنوں کی بات کوئی نہیں سنے گا۔

انہوں نے کہا کہ ہم براڈ شیٹ کیس میں انصاف چاہتے ہیں۔ ملک کا دس ارب چوری ہو گیا ہے۔تمام چیئر مین نیب کیخلاف کارروائی کریں ٗ جو ان کے اہلکار تھے کارروائی کریں ٗ ان کیخلاف پرچہ درج کریں۔ان کا نیب نوے دن کا ریمانڈ لے۔کل حمزہ شہباز بیس مہینے کے بعد جیل سے باہر آئیں گے۔ شہباز شریف ابھی تک جیل میں ہیں ٗ خواجہ آصف ٗ خورشید شاہ جیل میں ہیں۔اگر وہ جیل جا سکتے ہیں تو یہ نیب کے جو چیئر مین ہیں جنہوں نے کمیشن لیکر اگریمنٹ سائن کئے۔ کمیشنز لیں ان کیخلاف بھی کارروائی ہونی چاہیے۔

شاہد خاقان عباسی آ ج جو وفاق نے یہاں سے تیس ملین ڈالر بھیجا ہے انگلینڈ میں اور پھر موسوی کو پیمنٹ کی۔ ان سے کوئی پوچھنے والا ہے ؟۔ جس ملک میں احتساب کا ادارہ قابل احتساب ہو  جائے جس کا ٹرانسپرنسی انٹرنیشنل نے بھی ذکر کر دیا ہے کہ دنیا کے کرپٹ ترین حکومتوں میں عمران خان کی حکومت تو ہم یہی مقدمہ عوام کے سامنے رکھنا چاہتے ہیں۔


ای پیپر