Restriction, Nawaz Sharif, Ishaq Dar, Pakistan, Shibli Faraz
24 نومبر 2020 (11:09) 2020-11-24

اسلام آباد: وفاقی وزیر اطلاعات شبلی فراز نے کہا ہے کہ سابق وزیراعظم نواز شریف، ان کے سمدھی اسحاق ڈار اور صاحبزادوں کے پاکستان آنے پر کوئی قدغن نہیں۔

اپنی ٹویٹ میں وفاقی وزیر اطلاعات نے کہا کہ نواز شریف پاکستان تشریف لائیں اور والدہ مرحومہ بیگم شمیم اختر صاحبہ کے جنازے میں شرکت فرما کر ثواب دارین حاصل کریں۔ انہوں نے کہا کہ ریاستی جبر کا پروپیگنڈا دانستہ ہے، ن لیگ اس معاملے پر بھی سیاست کر رہی ہے ، شبلی فراز نے لیگی رہنماوں پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ وہ قوم کو بے وقوف بنانے کی کوشش نہ کریں۔

واضح رہے کہ دادی کی وفات کی خبر 2 گھنٹے لیٹ ملنے پر پاکستان مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز نے حکومت پر تنقید کرتے ہوئے کہا تھا کہ موبائل فون سروس بند ہونے کی وجہ سے مجھے دو گھنٹے بعد خبر ملی لیکن افسوس کسی حکومتی نمائندے کو شرم نہ آئی کہ وہ مجھ تک دادی مرنے کی خبر ہی پہنچا دیتا۔

انہوں نے حکومت کا یہ رویہ دیکھتے ہوئے اپنے والد کو مشورہ دیا کہ وہ پاکستان نہ آئیں ورنہ یہ ظالم حکومت اُن کو انتقام کا نشانہ بنا دے گی۔

ادھر سابق وزیر اعظم نے کہا کہ وہ پاکستان ضرور آتے لیکن عالمی وبا کی شدت کی وجہ سے ڈاکٹروں نے انہیں سفر کرنے سے روک دیا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ لندن میں اُن کا علاج جاری ہے۔

یاد رہے کہ اتوار کے روز والدہ کی وفات کے بعد نواز شریف نے شہباز شریف سے ٹیلی فون پر رابطہ کیا تو وہ رو پڑے تھے۔

خیال رہے کہ مسلم لیگ ن نے شہباز شریف اور حمزہ شہباز کی دو ہفتوں پر پیرول پر رہائی کا مطالبہ کر دیا ہے۔ جس کے حوالے سے کہا جا رہا ہے کہ حکومت کی جانب سے دونوں رہنماوں کو پیرول پر رہا کر دیا جائے گا۔


ای پیپر