خادم حسین رضوی کے خلاف بغاوت کا مقدمہ درج کرنے کی درخواست پر فیصلہ محفوظ
24 نومبر 2018 (17:57) 2018-11-24

لاہور:لاہور کی سیشن عدالت نے خادم حسین رضوی کے خلاف بغاوت کا مقدمہ درج کرنے کی درخواست پر فیصلہ محفوظ کرلیا ہے ۔

تفصیلات کے مطابق ایڈیشنل سیشن جج رائے محمد کھرل نے عبداللہ ملک کی خادم حسین رضوی کے خلاف بغاوت کا مقدمہ درج کرنے کی درخواست پر سماعت کی ۔تھانہ سول لائنز کی جانب سے مقدمے کا ریکارڈ پیش کیا گیا، جس میں عدالت کو بتایا گیا کہ خادم حسین رضوی کے خلاف پہلے ہی 31 اکتوبر کو مقدمہ درج کیا جا چکا ہے جس میں توڑ پھوڑ ، ہنگامہ آرائی کی دفعات شامل ہیں ۔

درخواست گزار نے عدالت کو بتایا کہ خادم حسین رضوی نے آسیہ کیس کے فیصلے کے بعد ریاستی اداروں کے خلاف تقاریر کر کے عوام کو اکسایا اور شاہراہیں بند کر کے اربوں کی املاک کو نقصان پہنچا یاگیا تحریک لبیک کا یہ عمل بغاوت کے زمرے میں آتا ہے ۔

دائر درخواست میں استدعا کی گئی خادم حسین رضوی سمیت دیگر کے خلاف مقدمہ درج کرنے کی درخواست دی مگر پولیس نے کارروائی نہیں کی اس لیے عدالت خادم حسین رضوی کے خلاف بغاوت کا مقدمہ درج کرنے کا حکم دے۔


ای پیپر