پاکستان پوسٹ ملازمین کی جان کو خطرہ
24 مارچ 2020 (21:57) 2020-03-24

اسلام آباد:ملکی تاریخ میں پہلی مرتبہ گھر کی دہلیز پر پنشن پہنچانے کے عمل کا آغاز ہوگیا ، وزیراعظم کی ہدایت پرپاکستان پوسٹ 13 لاکھ افرادکوپنشن گھرپر پہنچائے گا،دوسری طرف پاکستان پوسٹ کے ملازمین نے اپنے خدشات کا اظہا رکرتے ہوئے کہا کہ اس عمل سے ہماری جانوں کو خطرہ ہے ۔

تفصیلات کے مطابق پنشنرز کو کورونا سےبچانے کےلیےپاکستان پوسٹ میدان میں آگیا، ملکی تاریخ میں پہلی مرتبہ گھر کی دہلیز پر پنشن پہنچانے کے عمل کا آغاز ہوگیا ہے,

وزیراعظم کی ہدایت پرپاکستان پوسٹ 13 لاکھ افرادکوپنشن گھرپرپہنچائےگا، وفاقی وزیر مراد سعید واجبات کی محفوظ ترین ترسیل کے عمل کی نگرانی کر رہے ہیں جبکہ فیلڈ اسٹاف کا حوصلہ بڑھانے کیلئے 20 اور 21 گریڈ کے افسران بھی میدان میں ہیں۔خیال رہے عمومی طور پر پنشن کی تقسیم کا عمل ہر ماہ 2 تاریخ سے شروع کیا جاتا ہے تاہم پاکستان پوسٹ کی بدولت 2 کی بجائے24 تاریخ سے پنشن کی تقسیم کاعمل شروع کردیا گیا ہے۔

پاکستان پوسٹ افسران نے اپنے خدشات کا اظہا رکرتے ہوئے کہا ایک طرف ہمیں بزرگوں سے دوراور حفاظتی اقدامات کی ہدایت کی جا رہی ہے جبکہ دوسری طرف ہمیں خود بزرگوں کے پاس بھیجا جا رہا ہے ،اس بات کی کیا گارنٹی ہے کہ جن بزرگوں کے پاس ہم جا ئینگے وہ صحت مند ہیں یا کرونا وائرس کا شکار ،پوسٹ آفس کے ملازمین نے مطالبہ کیا ہماری حفاظت کو مدنظر رکھتے ہوئے ہمیں مکمل طور پر حفاظتی سوٹ مہیا کیے جائیں اور پیرا میڈیکل سٹاف کو ہمارے ساتھ روانہ کیا جائے ۔


ای پیپر