جسٹس ثاقب نثار کے بیٹے نے اعتزاز احسن کا جرمانہ صدقے کے طور پر ادا کردیا
24 مارچ 2018 (16:10) 2018-03-24

لاہور: چیف جسٹس پاکستان نے سینئر وکیل اعتزاز احسن پر جرمانے کی رقم خود ادا کردی۔


تفصیلات کے مطابق ہفتہ کو سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں ڈبہ پیک دودھ کے کیس کی سماعت کے دوران سینئر وکیل اعتزاز احسن دلائل دینے کے لیے پیش ہوئے تو چیف جسٹس نے ان سے مکالمہ کیا کہ آپ کو جو 10 ہزار روپے جرمانہ ہوا تھا وہ میں نے جمع کرا دیا ہے، ہم نے وہ پیسے صدقے کے طور پرجمع کرائے ہیں۔چیف جسٹس کی بات سن کر اعتزاز احسن جانے لگے تو جسٹس ثاقب نثار نے انہیں واپس بلا لیا اور عدالتی عملے کو 10 ہزار روپے کی رسید اعتزاز احسن کو دینے کا حکم دیا۔


جسٹس ثاقب نثار نے اعتزاز احسن سے کہا کہ آپ کے انکار پر میرے بیٹے نے یہ جرمانہ جمع کرایا، میرے بیٹے نے کہا کہ تایا جی کے پیسے میں جمع کرا ئو ں گا۔واضح رہے کہ سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں ڈبہ بند دودھ سے متعلق از خود نوٹس کیس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس پاکستان نے چوہدری اعتزاز احسن کے پیش نہ ہونے پر ان پر 10 ہزار روپے جرمانہ عائد کیا تھا جس پر سینئر وکیل نے ناراضی کا بھی اظہار کیا تھا۔


ای پیپر