file photo

ملکی کرنٹ اکاؤنٹ ایک بار پھر سرپلس میں چلا گیا
24 جون 2020 (16:52) 2020-06-24

لاہور: ملکی کرنٹ اکاؤنٹ ایک بار پھر سرپلس میں چلا گیا، مئی میں کرنٹ اکاؤنٹ 1 کروڑ 30 لاکھ ڈالر سرپلس ہوگیا۔

رواں مالی سال کے دوران کرنٹ اکاؤنٹ دوسری بار سرپلس ہوا، اکتوبر 2019 میں بھی کرنٹ اکاؤنٹ سرپلس ہوگیا تھا۔ اسٹیٹ بنک کے مطابق گذشتہ سال مئی میں کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ ایک ارب ڈالر تھا، رواں مالی سال کے 11 ماہ میں کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ 73.70 فیصد کم ہوا۔

مالی سال کے گیارہ ماہ میں کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ 9 ارب 16 کروڑ 50 لاکھ ڈالرز کم ہوا، جولائی تا مئی کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ 3 ارب 28 کروڑ 80 لاکھ ڈالر رہا، گذشتہ سال اسی عرصے میں کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ 12 ارب 45 کروڑ 30 لاکھ ڈالرز تھا، اپریل 2020 میں کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ 53 کروڑ ڈالرز تھا۔


ای پیپر