چوہدری برادران کیخلاف نیب بڑا سکینڈل سامنے لے آیا
24 جولائی 2020 (18:09) 2020-07-24

لاہور: حکومت کی سب سے اہم اتحادی جماعت ق لیگ کیخلاف نیب نے شکنجہ تیار کر لیا ،قومی احتساب بیورو ( نیب) نے دعویٰ کیا ہے کہ چودھری برادران نے 5 بے نامی اکاؤنٹس سے منی لانڈرنگ کی اور بیرون ملک سے پاکستان میں پیسہ بھی منگوایا۔

تفصیلات کے مطابق چودھری برادران کیخلاف آمدن سے زائد اثاثوں کے کیس میں نیب انوسٹی گیشن میں اہم پیشرفت سامنے آئی ہے۔ نیب رپورٹ میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ چودھری برادران نے بے نامی اکاؤنٹس سے منی لانڈرنگ کی،لاہور ہائیکورٹ میں جمع کرائی گئی نیب رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ 1985ء میں چوھردی شجاعت اور ان کی فیملی کے 21 لاکھ کے اثاثے تھے جو 2019ء میں 51 کروڑ 84 لاکھ سے تجاوز کر گئے۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ چودھری شجاعت حسین کے بیٹوں نے بے نامی اکاؤنٹس سے بھاری رقم وصول کی۔ چودھری شجاعت اور بیٹوں کے اکاؤنٹس میں بیرون ملک سے رقم ٹرانسفر ہوئی، نیب کی جانب سے دعویٰ کیا گیا ہے کہ بیرون ملک سے 581 ملین سے زائد رقم ٹرانسفر ہوئی۔ بیرون ملک سے بھیجی گئی اس رقم کے کوئی ذرائع یا ثبوت موجود نہیں ہیں۔


ای پیپر