file photo

استنبول کی آیا صوفیہ مسجد میں 85 سال بعد نماز جمعہ ادا کی جائے گی
24 جولائی 2020 (13:06) 2020-07-24

انقرہ: ترکی کی تاریخ کا آج اہم دن ہے، استنبول کی آیا صوفیہ مسجد میں 85 سال بعد نماز جمعہ ادا کی جائے گی، ترک صدر طیب اردوان بھی وہیں نماز ادا کریں گے۔

آیا صوفیہ مسجد میں نماز جمعہ سے پہلے خصوصی تقریب جاری ہے ، جس میں قاری حضرات تلاوت قرآن مجید کر رہے ہیں، کورونا وائرس کی وجہ سے نمازیوں کی محدود تعداد آیا صوفیہ مسجد میں نماز جمعہ ادا کرے گی۔

واضح رہے کہ آیا صوفیہ 9 سو سال تک چرچ، پانچ سو سال تک مسجد، 85 سال تک میوزیم رہا۔ جہاں آج 85 سال بعد دوبارہ نماز جمعہ ادا کی جائے گی۔ اور اس کے چاروں میناروں سے اذان کی صدا، پانچ وقت گونجا کرے گی۔

آیا صوفیہ کی مسجد کی حیثیت کی بحالی کے بعد آج پہلی نماز جمعہ کی ادائیگی ہوگی، جس میں ترک صدر رجب طیب اردوان بھی شرکت کریں گے۔ آیا صوفیہ مسجد میں سبز رنگ کے نئے قالین بچھا دیے گئے ہیں، اور تاریخی عمارت نمازیوں کو خوش آمدید کہنے کیلئے تیار ہے۔

آیا صوفیا کو چرچ کے طور پر پہلی بار 360 عیسوی میں کھولا گیا، فسادات کے دوران دو بار اسے نذر آتش کردیا گیا، آخر کار، 5ویں صدی عیسوی میں اسے تیسری بار تعمیر کیا گیا۔ پھر اسے 15 صدی میں سلطان محمد فاتح میں مسجد بنا دیا۔

جدید ترکی کے بانی کمال اتاترک کے دور میں 1935 ء کو آیا صوفیہ کو مسجد سے میوزیم بنادیا گیا، اس فیصلے کو حال ہی میں کونسل آف سٹیٹ نے ختم کر دیا اور قرار دیا کہ آیا صوفیا مسجد ، سلطان محمد فاتح فاؤنڈیشن کی ملکیت ہے، اسے مسجد کے طور پر بحال کیا جاتا ہے۔


ای پیپر