موٹر سائیکل اور رکشہ کی رجسٹریشن میں اضافہ
24 جولائی 2019 (21:33) 2019-07-24

لاہور :حکومت نے عوام سے سستی ترین سواری بھی چھیننے کا پروگرام بنا لیا ، موٹر سائیکل جیسی عام سواری کی رجسٹریشن 3ہزار 400سے بڑھا کر 20ہزار 900روپے کر دی ۔

تفصیلات کے مطابق حکومت نے غریب عوام کی سستی سواری کو بھی مہنگا کر دیا ،وفاقی حکومت نے جائیدادوں پر ٹیکسز لگانے کے بعد موٹرسائیکل اور رکشے پر بھی ودہولڈنگ ٹیکس لگانے کا فیصلہ کرلیا ہے۔ فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) نے محکمہ ایکسائز سندھ کو ٹیکس کی وصولی کیلئے خط لکھا ہے جس کے مطابق ود ہولڈنگ ٹیکس لگنے کے بعد موٹر سائیکل کی رجسٹریشن میں 17 ہزار روپے کا اضافہ ہوگا۔

خط میں کہا گیا ہے کہ اِس وقت موٹر سائیکل کی رجسٹریشن فیس 3 ہزار 400 روپے ہے اور ودہولڈنگ ٹیکس کے بعد رجسٹریشن فیس 20 ہزار 900 روپے ہو جائے گی۔خط کے مطابق ود ہولڈنگ ٹیکس کے بعد رکشے کی رجسٹریشن میں بھی 7 ہزار روپے کا اضافہ ہوجائے گا اور رکشے کی رجسٹریشن 3 ہزار 100 روپے سے بڑھ کر 10 ہزار 750 روپے ہو جائے گی۔

یاد رہے کہ ایف بی آر نے کراچی کیلئے جائیداد کی نئی قیمت کا تعین کرلیا ہے جس کے تحت جائیدادوں کی قیمت میں 66 فیصد تک اضافہ ہوا ہے۔


ای پیپر