محسن نے مجھ سے پرانا بدلہ لینے کی کوشش کی : فاطمہ سہیل
24 جولائی 2019 (19:57) 2019-07-24

لاہور: اداکار و گلوکار محسن عباس حیدر کی اہلیہ فاطمہ سہیل کا کہنا ہے کہ محسن کی اصل حقیقت نکاح والے دن ہی کھل گئی تھی جبکہ فاطمہ سہیل کے وکیل بیرسٹر احتشام کا کہنا ہے کہ پولیس معاملے کو دبانے کی کوشش کررہی ہے ۔

تفصیلات کے مطابق فاطمہ سہیل نے اپنے ایک انٹرویو میں بتایا کہ محسن کی اصل حقیقت نکاح والے دن ہی کھل گئی تھی، نکاح والے دن شادی کے اسٹیج پر اس کا رویہ اچانک بدل گیا تھا، اس وقت مجھے احساس ہوا کہ اس نے مجھ سے پرانا بدلہ لینے کے لیے شادی کی ہے۔ محسن شادی والے دن مسلسل میرے خاندان والوں کو ذلیل کر رہا تھا، دوسرے روز بھی اس نے میرے رشتہ داروں کی بے عزتی کی میری بہن وہاں سے روتے ہوئے گئی اور شادی کے تین روز بعد ہی اس نے میرے منہ پر تھپڑ بھی مارے، دعا ملک اس بات کی گواہ ہیں۔

انہوں نے مزید بتایا کہ میرے سسرال والے بجائے محسن کو سمجھانے کے، مجھے سمجھانے کی کوشش کر رہے تھے کہ محسن کا غصہ تھوڑا الگ ہے اور اب آپ کو یہ برداشت کرنا پڑے گا۔ فاطمہ نے کہا کہ میرا شوہر مجھے چھری سے ڈراتا تھا کہ اپنے والدین سے نہیں ملنا اس لیے میں نے چھ ماہ تک ظلم برداشت کیے، میں اپنے خاندان والوں کا فون بھی نہیں سن سکتی تھی۔

فاطمہ نے کہا کہ میرے والدین نے میری مدد کی لیکن سسرال والوں نے میرا بالکل بھی ساتھ نہیں دیا اور کہا کہ چونکہ میں نے اپنی مرضی سے شادی کی ہے اس لیے مجھے اکیلے ہی برداشت کرنا پڑے گا، اور میں نے شروع میں برداشت بھی کیا کیوں کہ میں نہیں چاہتی تھی کہ تماشا بنے۔ دوسری جانب فاطمہ سہیل اور ان کے وکیل بیرسٹر احتشام کا کہنا ہے کہ پولیس معاملے کو دبانے کی کوشش کررہی ہے، مقدمہ درج ہونے کے بعد ملزم کو گرفتار کرنا چاہیے تھا۔


ای پیپر