Maryam Nawaz, Khokhar palace, Lahore, Malik Saif ul Malook Khokhar, Khokhar brothers
24 جنوری 2021 (16:56) 2021-01-24

لاہور: پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما افضل کھوکھر اور سیف الملوک کھوکھر نے کہا کہ انہوں نے پیلس کی زمین کا ایک ایک مرلہ خود خریدا تھا ، پنجاب حکومت اُن کو انتقام کا نشانہ بنا رہی ہے۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کھوکھر برادران نے کہا کہ ہمیں نواز شریف کا ساتھی ہونے کی سزا دی جا رہی ہے۔ ہم پر الزام لگایا جا رہا ہے کہ ہم نے اس زمین پر قبضہ کیا ہوا تھا ، اگر یہ قبضہ ہے تو سپریم کورٹ نے یہ قبضہ کرایا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر حکومت عدالتوں کو نہیں مانتی تو اسے تالے لگا دے۔

لیگی رہنماؤں نے کہا کہ وہ نواز شریف کے وفادار ساتھی ہیں اور ہمیشہ رہیں گے۔ اسمبلی کے اندر رہ کر بھی بات کریں گے اور باہر بھی بات کریں گے۔ افضل کھوکھر نے کہا کہ اداروں نے یہ غنڈہ گردی عمران خان کے کہنے پر کی ہے۔ جبکہ سیف الملوک کھوکھر نے کہا کہ اداروں نے چادر اور چار دیواری کے تقدس کو پامال کیا ہے۔ حکومت نے کھلی بدمعاشی کا مظاہرہ کیا اور قانون کو ہاتھ میں لیا۔

رہنما مسلم لیگ (ن) خواجہ سعد رفیق نے کہا کہ کھوکھر برادران جمہوریت کی جنگ لڑ رہے ہیں ، لوگوں کو جمع کرنے سے ہمیں کوئی نہیں روک سکتا ، یہاں پریس کانفرنس سے بھی روکا جا رہا ہے۔ حکومت کو اس غنڈہ گردی کا جواب دینا ہوگا۔

چادر اور چار دیواری کا تقدس پامال کیا گیا ، آج بھی 4 ہزار بندہ اکٹھا کرکے مزاحمت کرسکتے تھے ، کھوکھر برادران نے کسی طرح کی کوئی مزاحمت نہیں کی ، ایسی کارروائیوں سے مرعوب نہیں ہوں گے ، حکمرانوں کو حساب دینا ہوگا ، ایسے ہتھکنڈوں سے ن لیگ اور پی ڈی ایم کمزور نہیں ہوگی۔

دوسری جانب معاون خصوصی پنجاب فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ کھوکھر برادران کے قبضے سے آج سوا کھرب روپے کی زمین واگزار کرائی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ (ن) عوام کو گمراہ کرنے کا کوئی موقع نہیں چھوڑتی۔

فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے آپریشن کی خود نگرانی کی ، کھوکھر برادران قبضہ مافیا اور گینگ تھا ، بغیر کسی دباؤ کے تجاوزات کیخلاف آپریشن کیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ یہ ٹولہ جعلی راجکماری کو 50 ، 50 لاکھ کے پرس گفٹ کرتا تھا۔ ماضی میں سرکاری و غیر سرکاری گٹھ جوڑ سے اربوں روپے کمائے گئے ، ماضی میں بہتی گنگا میں پوری مسلم لیگ (ن) ہاتھ دھوتی رہی ، مسلم لیگ (ن) قبضہ مافیا کی پشت پناہی کرتی تھی۔


ای پیپر